know-who-is-kolkata-police-commissioner-rajeev-kumar, کولکاتہ میں شاردا چٹ فنڈ معاملہ کو لے کر ممتا بنرجی حکومت اور سی بی آئی آمنے- سامنے ہے۔– News18 Urdu

جانئے کون ہیں وہ پولیس افسر، جن کے لئے راتوں رات دھرنے پر بیٹھ گئیں ممتا بنرجی

کولکاتہ میں شاردا چٹ فنڈ معاملہ کو لے کر ممتا بنرجی حکومت اور سی بی آئی آمنے- سامنے ہے۔

Feb 04, 2019 07:53 AM IST | Updated on: Feb 04, 2019 08:33 AM IST

کولکاتہ  میں شاردا چٹ فنڈ معاملہ کو لے کر ممتا بنرجی حکومت اور سی بی آئی آمنے- سامنے ہیں ۔ کولکاتہ پولیس کمشنر راجیو کمار سے پوچھ گچھ کرنے گئی سی بی آئی ٹیم کے آفیسر کو کولکاتہ پولیس نے حراست میں لے لیا۔ حالاںکہ بعد میں انہیں چھوڑ دیا گیا۔ کل ملا کر یہ کہیں  کہ اپنے ایک کمشنر کے لئے ممتا بنرجی نے سیدھے مرکزی حکومت اور سی بی آئی سے ٹکر لے لی ہے۔

آئیے جانتے ہیں کون ہیں یہ پولیس آفیسر راجیو کمار جن کے لئے ممتا بنرجی راتوں رات دھرنے پر بیٹھ گئی اور جس نے بنگال سمیت پورے ملک کی سیاست میں زبردست تہلکہ مچا دیا ہے؟

جانئے کون ہیں وہ پولیس افسر، جن کے لئے راتوں رات دھرنے پر بیٹھ گئیں ممتا بنرجی

Loading...

کون ہیں راجیو کمار؟

راجیو کمار بنگال کے 1989 بیچ کے آئی پی ایس افسر ہیں اور اس وقت کولکاتہ پولیس کمشنر ہیں۔ راجیو کمار کو مغربی بنگال کی وزیر اعلی ممتا بنرجی کا قریبی مانا جاتا ہے۔ راجیو کمار بنیادی طور پر یو پی کے چاندوسی سے تعلق رکھتے ہیں۔

کیسے آئے سی بی آئی کے نشانے پر؟

شاردا چٹ فنڈ گھوٹالہ  بنگال کا ایک بڑا گھوٹالہ  ہے۔ جس میں کئی رسوخ دار لوگوں کے ہاتھ ہونے کا الزام لگتا رہا ہے۔ دراصل مغربی بنگال کی چٹ فنڈ کمپنی شاردا گروپ نے عام لوگوں کو ٹھگنے کے لئے کئی آفر دئے تھے۔ اس کمپنی کی جانب سے 34 گنا رقم ادا کرنے کا وعدہ کیا گیا تھا اور لوگوں سے پیسے ٹھگے گئے تھے۔

کیا ہے راجیو کمار پر الزام؟

دراصل، راجیو کمار شاردا چٹ فنڈ معاملہ میں نشانے پر ہیں۔ راجیو کمار نے ہی چٹ فنڈ گھوٹالہ کی جانچ کرنے والی ایس آئی ٹی ٹیم کی قیادت کی تھی۔ علاوہ ازیں کہا گیا تھا کہ اس جانچ کے دوران گھوٹالہ ہوا تھا۔ یہ کمیٹی سال 2013 میں قائم کی گئی تھی۔ ذرائع کے مطابق، گھوٹالہ کی جانچ سے متعلق کچھ اہم فائل اور دستاویز غائب ہیں۔ وہیں ، سی بی آئی گمشدہ فائلوں اور دستاویزات کو لے کر پولیس کمشنر سے پوچھ گچھ کرنا چاہتی ہے۔ ساتھ ہی سی بی آئی نے پولیس کمشنر کو فرار بتایا تھا۔

 

Loading...