نوٹوں پرپابندی کا فیصلہ بغیر سوچا سمجھا: کلکتہ ہائی کورٹ کا سخت تبصرہ– News18 Urdu

نوٹوں پرپابندی کا فیصلہ بغیر سوچا سمجھا: کلکتہ ہائی کورٹ کا سخت تبصرہ

کلکتہ ۔ نوٹوں پر پابندی کے اچانک فیصلے پر کلکتہ ہائی کورٹ نے سخت تبصرہ کرتے ہوئے کہا ہے کہ حکومت کا یہ فیصلہ بغیر سوچا سمجھا ہے۔

Nov 18, 2016 06:36 PM IST | Updated on: Nov 18, 2016 06:36 PM IST

کلکتہ ۔ نوٹوں پر پابندی کے اچانک فیصلے پر کلکتہ ہائی کورٹ نے سخت تبصرہ کرتے ہوئے کہا ہے کہ حکومت کا یہ فیصلہ بغیر سوچا سمجھا ہے- عدالت نے  کہا کہ مرکز نے صحیح طریقے سے سوچ و غور کر نے کے بعد فیصلہ نہیں لیا ہے۔ نوٹ تبدیل کرنے کو لے کر حکومت کی طرف سے ہر روز کچھ نہ کچھ بدلے جا رہے اصول پر بھی ناراضگی ظاہر کرتے ہوئے کہا کہ عدالت نے کہا ہے کہ اس سے ثابت ہوتا ہے کہ حکومت نے بغیر ہوم ورک کیے بغیر یہ بڑا فیصلہ لیا ہے۔

ہائی کورٹ نے عوام کو آسانی سے پیسہ مہیا نہیں کرنے کے لئے بینک ملازمین کی بھی تنقید کی ہے۔ ہائی کورٹ نے کہا کہ میں حکومت کے فیصلے کو تبدیل نہیں کر سکتا ہوں، لیکن بینک ملازمین میں عوام کے مسائل کو حل کرنے کا عزم ہونا چاہئے۔ نوٹ پرپابندی پر پی آئی ایل کی سماعت کرتے ہوئے بنچ کی سربراہی کر رہے جسٹس نے کہا کہ لوگ پیسہ نکالے کے لئے لمبی لمبی قطاروں میں کھڑے ہیں اور ہسپتال میں علاج نہیں مل رہا ہے۔ اس فیصلے نے لوگوں کی زندگی اجیرن کردی ہے جو صحیح نہیں ہے۔

نوٹوں پرپابندی کا فیصلہ بغیر سوچا سمجھا: کلکتہ ہائی کورٹ کا سخت تبصرہ
Loading...