کشی نگر حادثہ:ڈرائیور نے لگا رکھا تھاایئر فون،ٹرین دیکھنے کے بعد بھی نہیں روکی وین– News18 Urdu

کشی نگر حادثہ:ڈرائیور نے لگا رکھا تھاایئر فون،ٹرین دیکھنے کے بعد بھی نہیں روکی وین

کشی نگر میں جمعرات کو ہوئے اسکول وین اور ٹرین کی ٹکر میں13 گھروں کے چراغ بجھگئے۔اس بھیانک حادثے کی پہلی وجہ سامنے آئی ہے۔عینی شاہدین کے مطابق ڈرائیور نے کان میں ایئر فون لگا رکھاتھا۔

Apr 26, 2018 11:38 AM IST | Updated on: Apr 26, 2018 11:47 AM IST

کشی نگر میں جمعرات کو ہوئے اسکول وین اور ٹرین کی ٹکر میں13 گھروں کے چراغ بجھگئے۔اس بھیانک حادثے کی پہلی وجہ سامنے آئی ہے۔عینی شاہدین کے مطابق ڈرائیور نے کان میں ایئر فون لگا رکھاتھا۔اتنا ہی نہیں ٹرین کو دیکھنے کے بعد بھی ڈرائیور نے ٹریک کراس کرنے کی کوشش کی۔نتیجہ  رہا کہ 13 بچوں کی موت ہو گئی جبکہ حادثے میں ڈرائیور سمیت سات لوگ شدید طور پر زخمی ہیں۔

واردات کے وقت موقع پر موجود ایک بائک سوار نےکہا کہ ٹرین ہارنبجا رہی تھی۔باوجد اس کے ڈرائیور نے گاڑی نہیں روکی اور کراسنگ پار کرنے کی کوشش کی۔گواہوں کے مطابق ٹکر اتنی خطرناک تھی کہ وین 50کلو میٹر دور جاکر گری۔عینی شاہدین نے بتایا کہ ٹرین کے ڈرائیور نے بریک لگایا لیکن اسپیڈ اتنی تھی کہ حادثہ نہیں ٹل سکا۔

کشی نگر حادثہ:ڈرائیور نے لگا رکھا تھاایئر فون،ٹرین دیکھنے کے بعد بھی نہیں روکی وین

حادثے میں زخمی طلبا کا علاج کیا جا رہا ہے۔

Loading...

وہیں دیگر لوگوں کا کہنا ہے کہ ڈرائیور نے کان میں ایئر فون بھی لگا رکھا تھا۔اس نے ٹرین کو دیکھا لیکن جلدبازی کی وجہ سے کراسنگ پار کرنے کی کوشش کی ۔پورے معاملے میں وین کے ڈرائیور کی لا پرواہی سامنے آ رہی ہے۔لیکن ساتھ ہی  ریلوے کی لاپرواہی بھی سامنے آ رہی ہے۔کراسنگ پر کوئی گیٹ مین تعینات نہیں تھا۔

حادثے پر سی پی آر اوشمال۔مشرق ریلوے سنجے یادو نے کہا کہ پہلے وین ڈرائیور کی غلطی نظر آ رہی ہے۔انہوں نےکہا کی قوانین کے مطابقڈرائیور کو رکنا چاہئے  تھا کہ ٹرین آ رہی ہے کہ نہیںلیکن جلد بازی کے چکر میں اس نے ٹریک کراس کرنے کی کوشش کی اور حادثہ ہو گیا۔معاملے میں ریلوے نے جانچ کے احکام دئے ہیں۔

Loading...