لوک سبھا الیکشن نتائج: بھوپال میں دگ وجے سنگھ پرگیہ ٹھاکر سے 86 ہزار ووٹوں سے پیچھے– News18 Urdu

لوک سبھا الیکشن نتائج: بھوپال میں دگ وجے سنگھ پرگیہ ٹھاکر سے 86 ہزار ووٹوں سے پیچھے

بھوپال میں گزشتہ تین دہائیوں سے بی جے پی جیتتی آ رہی ہے۔ پچھلی بار بی جے پی کے پرکاش سنجر نے تین لاکھ 70 سے زیادہ ووٹوں سے فتح حاصل کی تھی۔

May 23, 2019 01:13 PM IST | Updated on: May 23, 2019 01:14 PM IST

بھارتیہ جنتا پارٹی (بی جے پی) کا گڑھ مانی جانے والی ملک کی اہم پارلیمانی سیٹ بھوپال میں کانگریس کے سینئر لیڈر اور سابق وزیر اعلی دگ وجے سنگھ اپنے قریب ترین حریف بی جے پی کی پرگیہ سنگھ ٹھاکر سے تقریبا 86 ہزار ووٹوں سے پیچھے چل رہے ہیں۔ سرکاری اعداد کے مطابق دوپہر ساڑھے بارہ بجے تک دگ وجے سنگھ 86 ہزار پانچ سو سے زیادہ ووٹوں سے پیچھے تھے۔ بھوپال میں گزشتہ تین دہائیوں سے بی جے پی جیتتی آ رہی ہے۔ پچھلی بار بی جے پی کے پرکاش سنجر نے تین لاکھ 70 سے زیادہ ووٹوں سے فتح حاصل کی تھی۔

بھوپال میں بی جے پی امیدوار پرگیہ ٹھاکر کی یہ برتری اہم مانی جا رہی ہے۔ اس دوران ریاستی بی جے پی ہیڈ کوارٹر میں جشن کا ماحول ہے۔ ریاستی صدر راکیش سنگھ اور دیگر رہنما اور کارکن ہیڈ کوارٹر میں بیٹھ کر ایک دوسرے کو مبارکباد دیتے ہوئے کارکنوں کی حوصلہ افزائی کرتے ہوئے دیکھے گئے۔

لوک سبھا الیکشن نتائج: بھوپال میں دگ وجے سنگھ پرگیہ ٹھاکر سے 86 ہزار ووٹوں سے پیچھے

دگ وجے سنگھ ، پرگیہ سنگھ ٹھاکر: فائل فوٹو۔

Loading...

وہیں گنا پارلیمانی حلقہ سے ایک اور سینئر کانگریس لیڈر اور سابق مرکزی وزیر جیوتی رادتیہ سندھیا اپنے قریبی حریف بی جے پی کے كرشن پال سنگھ سے تقریبا 53 ہزار ووٹوں سے پیچھے ہیں۔ سندھیا گنا سیٹ سے سال 2002 سے مسلسل کامیاب ہوتے آ رہے ہیں۔  سنگھ پہلے کانگریس میں ہی تھے اور سندھیا کے ساتھی کے طور پر جانے جاتے تھے۔

سدھی میں کانگریس کے سینئر لیڈر اور سابق وزیر اعلی ارجن سنگھ کے بیٹے اجے سنگھ بی جے پی کی موجودہ رہنما ریتی پاٹھک سے تقریبا 78 ہزار ووٹوں سے پچھڑ گئے ہیں۔ بی جے پی امیدوار کی یہ برتری اہم مانی جا رہی ہے۔ سنگھ اس کے پہلے سدھی پارلیمانی حلقہ کے تحت آنے والے چرهٹ اسمبلی حلقہ سے نومبر دسمبر میں اختتام اسمبلی انتخابات بھی ہار گئے تھے۔

مدھیہ پردیش میں 29 میں سے 28 سیٹوں پر بی جے پی آگے چل رہی ہے۔ واحد چھندواڑہ پارلیمانی سیٹ سے وزیر اعلی کمل ناتھ کے بیٹے نكل ناتھ اپنے قریبی حریف بی جے پی کے نتتھن شاہ سے تقریبا 35 ہزار ووٹوں سے آگے ہیں۔ وزیر اعلی کمل ناتھ چھندواڑہ اسمبلی کا ضمنی انتخاب لڑ رہے ہیں اور وہ بھی برتری بنائے ہوئے ہیں۔

Loading...