مغربی بنگال میں کشمیر جیسے حالات پیدا ہو چکے ہیں: وزیر اعظم مودی– News18 Urdu

مغربی بنگال میں کشمیر جیسے حالات پیدا ہو چکے ہیں: وزیر اعظم مودی

مودی نے کہا کہ ممتا بنرجی نے بایاں محاذ کے دور اقتدار کو تبدیلی کے نام پر ختم کیا تھا۔ عوام کو امید تھی کہ بنگال میں تبدیلی آئے گی مگر مجھے کہنے میں شرم آرہی ہے کہ بنگال میں حالات مزید خراب ہوئے ہیں

Apr 20, 2019 05:29 PM IST | Updated on: Apr 20, 2019 05:30 PM IST

وزیرا عظم نریندر مودی نے آج وزیر اعلیٰ ممتا بنرجی کی سخت تنقید کرتے ہوئے کہا کہ بنگال میں پہلے دو مرحلے میں بڑے پیمانے پر ووٹنگ ہوئی ہے اس کی وجہ سے ممتا بنرجی پریشان ہیں۔ وزیرا عظم مودی نے بنیاد پور میں ریلی سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ بنگال میں غنڈہ گردی، ہنگامہ آرائی کے باوجود بڑے پیمانے پر ووٹنگ سے ممتا بنرجی کی نیند حرام ہوگئی ہے۔ مودی نے کہا کہ پرولیا میں بی جے پی ورکروں کو ماردیا گیا ہے میں یقین دلاتا ہوں انصاف ضرورہوگا اور مجرم کو سزا مل کر رہے گی۔

مودی نے کہا کہ ممتا بنرجی نے بایاں محاذ کے دور اقتدار کو تبدیلی کے نام پر ختم کیا تھا۔ عوام کو امید تھی کہ بنگال میں تبدیلی آئے گی مگر مجھے کہنے میں شرم آرہی ہے کہ بنگال میں حالات مزید خراب ہوئے ہیں اور عوام کی امیدوں کو چکنا چور کردیا گیا ہے۔ وزیرا عظم مودی نے کہا کہ بنگال کے عوام  شاردا چٹ فنڈ جیسے گھپلوں کی وجہ سے اپنی جمع پونجی سے محروم ہوگئے۔ ان چٹ فنڈ کمپنیوں میں ترنمول کانگریس کے ممبران پارلیمنٹ شامل ہیں اور بدعنوان لوگوں کو بچانے کیلئے دھرنے کا ڈراما بھی کیا گیا ہے۔

مغربی بنگال میں کشمیر جیسے حالات پیدا ہو چکے ہیں: وزیر اعظم مودی

وزیرا عظم نریندر مودی : فائل فوٹو

اس سے قبل وزیر اعظم مودی نے ایک نیوز چینل کو خصوصی انٹرویو دیتے ہوئے بنگال کی صورت حال کا کشمیر سے موازنہ کرتے ہوئے کہا کہ جس طریقے سے کشمیری پنڈتوں کے خلاف کشمیر میں تشدد کے واقعات دیکھنے کو ملے تھے۔ اسی طرح کے حالات اس وقت بنگال میں ہیں۔ وزیر اعظم نے کہا کہ”بنگال میں تشدد کے واقعات تشویش ناک ہیں،اس کو سنجیدگی سے دیکھنے کی ضرورت ہے۔ وزیرا عظم مودی نے گزشتہ دنوں بی جے پی ورکروں کی موت کا حوالہ دیتے ہوئے کہا کہ کشمیر میں پولنگ پرامن ماحول میں ہوئی مگر بنگال میں پہلے دونوں مرحلوں کی پولنگ کے دوران تشدد کے واقعات بڑے پیمانے پر ہوئے ہیں۔