مسجد جمیل بیگ : بلا تفریق مذہب وملت ہر ضرورت مند ملتا ہے مفت کھانا– News18 Urdu

مسجد جمیل بیگ : بلا تفریق مذہب وملت ہر ضرورت مند ملتا ہے مفت کھانا

اورنگ آباد : انسانیت کی خدمت سے بڑھ کر کوئی شے نہیں اور جب خلوص دل سے کوئی قدم اٹھایا جائے ، تو اس میں اوپر والے کی مدد بھی شامل ہوجاتی ہے۔ مسجد جمیل بیگ کی مفت طعام گاہ کو دیکھ کر تو یہی کہا جاسکتا ہے۔

Mar 05, 2016 05:18 PM IST | Updated on: Mar 05, 2016 05:19 PM IST

اورنگ آباد : انسانیت کی خدمت سے بڑھ کر کوئی شے نہیں اور جب خلوص دل سے کوئی قدم اٹھایا جائے ، تو اس میں اوپر والے کی مدد بھی شامل ہوجاتی ہے۔ مسجد جمیل بیگ کی مفت طعام گاہ کو دیکھ کر تو یہی کہا جاسکتا ہے۔

اورنگ آباد کا گورنمنٹ میڈیکل کالج اینڈ ہاسپٹل پورے مراٹھواڑہ میں گھاٹی دواخانہ کے نام سے مشہور ہے۔ مراٹھواڑہ ریجن کے تمام اضلاع سے مریض علاج کی خاطر گھاٹی دواخانہ کا رخ کرتے ہیں اورعلاج مکمل ہونے تک اورنگ آباد میں مقیم رہتے ہیں۔ دیگر اضلاع سے آنے والے مریضوں کی تعداد ہزاروں میں ہوتی ہے۔ ان میں زیادہ تر غریب اور مدد کےمستحق ہوتے ہیں۔

مسجد جمیل بیگ : بلا تفریق مذہب وملت ہر ضرورت مند ملتا ہے مفت کھانا

ایسے مستحق افراد کو دربہ در بھٹکنے سے بچانے اور ان کی ضروریات کو پورا کرنے کا بیڑہ کل ہند مجلس تعمیر ملت اورنگ آباد شاخ نے اٹھایا ہے۔ مجلس نے تین سال پہلے مریضوں اور ان کے رشتہ داروں کے طعام وقیام کا جو سلسلہ شروع کیا تھا ، وہ اب تک جاری ہے۔

مسجد کا نام لیتے ہی ایسے مقام کا تصور ذہن میں ابھرتا ہے ۔ جو عبادت اور نماز کے لیے مختص ہو ، لیکن اورنگ آباد کی مسجد جمیل بیگ بے بس اور بے سہارا لوگوں کا مسکن ہے۔ نہ صرف مسکن بلکہ اسی مسجد سے بلا تفریق مذہب وملت ہر بھوکا شکم سیر ہوکر جاتا ہے۔ خواہ دوپہر ہو یا شام، مسجد میں دسترخوان بچھانے کا یہ سلسلہ پچھلے تین سال سے جاری ہے۔ یہ کام محض خدمت خلق کے جذبہ کے تحت کیا جارہا ہے۔

تعمیر ملت کے درجنوں کارکنوں نےاس کام کے لیے خود کو وقف کردیا ہے۔ مسجد میں کھانا کھانے اور کھانا لےجانے والوں کا تانتا بندھا رہتا ہے۔ ہرمریض اور اس کے رشتے دار کو یہاں کھانا تو ملتا ہی ہے ، ساتھ میں توشہ لےجانے کی بھی سہولت ہے اور وہ بھی بلامعاوضہ۔ یہاں کچھ ایسے بھی مریض آتے ہیں ، جن کا دو اور تین سال سے گھاٹی دواخانہ میں علاج چل رہا ہے، مگر وہ بھی کبھی بھوکے نہیں لوٹے۔

تعمیر ملت کے رضاکار صرف گھاٹی دواخانہ کے مریضوں کا خیال کرتے ، ایسی بات بھی نہیں بلکہ دو کلو میٹر فاصلے پر واقع کینسر اینڈ ٹی بی اسپتال کے مریضوں اور ان کے رشتہ داروں کے لیے بھی اسپتال کے احاطہ میں ہی دسترخوان بچھایا جاتا ہے ۔ کینسر اسپتال میں مرد کے ساتھ ساتھ خواتین کے لیے بھی دسترخوان پر کھانا کھانے کی سہولت ہے۔

Loading...