mayawati akhilesh yadav and ajit singh joint rally for muslim vote in saharanpur lok sabha elections 2019– News18 Urdu

بی جے پی کو شکست دینا ہے توکانگریس کوووٹ نہ کریں مسلمان: دیوبند میں اتحاد کی ریلی میں مایاوتی کی اپیل

اکھلیش یادواوراجیت سنگھ کی موجودگی میں بی ایس پی سربراہ نے کہا کہ مسلمان جذبات میں بہہ کراپنے ووٹوں کی تقسیم نہ ہونے دیں۔

Apr 07, 2019 03:52 PM IST | Updated on: Apr 07, 2019 03:53 PM IST

لوک سبھا الیکشن 2019 کے لئے سہارنپورپارلیمانی حلقہ کے دیوبند میں سماجوادی پارٹی- بی ایس پی اور آرایل ڈی اتحاد کی ریلی کو خطاب کرتے ہوئے بی ایس پی سربراہ مایاوتی نے بی جے پی کے ساتھ ساتھ کانگریس پربھی جم کرحملہ کیا۔ مایاوتی نے کہا کہ کانگریس مان کرچل رہی ہے ہم جیتیں یا نہ جیتں، اتحاد نہیں جیتنا چاہئے، اس لئے اس نے بی جے پی کو فائدہ پہنچانے والے امیدواراتارے ہیں۔

مایاوتی نے کہا کہ میں مسلم سماج کے لوگوں سے کہنا چاہتی ہوں کہ اگربی جے پی کوہرانا ہے توجذبات میں بہہ کرووٹ کو تقسیم نہیں کرنا ہے۔ انہوں نے کہا کہ سہارنپورمیں بڑی تعداد میں بی ایس پی کا ووٹ بینک ہے اوراب تو جاٹ بھائی بھی ساتھ آگئے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ مغربی یوپی میں تمام مذاہب کے لوگ رہتے ہیں۔ سہارنپور، میرٹھ، مرادآباد اوربریلی منڈل میں مسلم سماج کی آبادی کافی زیادہ ہے۔ مایاوتی نے کہا کہ میں اس الیکشن میں مسلم سماج کے لوگوں کومحتاط کرنا چاہتی ہوں کہ پوری یوپی میں کانگریس بی جے پی کوٹکردینے کے لائق نہیں ہے۔

بی جے پی کو شکست دینا ہے توکانگریس کوووٹ نہ کریں مسلمان: دیوبند میں اتحاد کی ریلی میں مایاوتی کی اپیل

سہارنپورکےدیوبند میں اکھلیش یادو، مایاوتی اور اجیت سنگھ کی مشترکہ ریلی کا منظر۔

Loading...

مایاوتی نے سہارنپورلوک سبھا سیٹ کی مثال دیتے ہوئے کہا کہ یہاں کے مسلمانوں کو معلوم ہے کہ بی ایس پی نے بہت پہلے اپنے مسلم امیدوارکا ٹکٹ فائنل کردیا تھا۔ کانگریس کوپتہ ہے کہ سہارنپورمیں اسے کوئی اورووٹ ملنے والا نہیں ہے، اس لئے میں کہنا چاہتی ہوں کہ مسلم سماج کو اپنا ووٹ تقسیم ہونے دینا ہے۔ بلکہ اتحاد کےامیدوارکوکامیاب بنانا ہے۔

بی ایس پی سربراہ نے بی جے پی پربھی نشانہ سادھا۔ انہوں نے کہا کہ مودی کو اب اتحاد سے ڈرلگ رہا ہے۔ یہ توطے ہے کہ اب اترپردیش سے بی جے پی جارہی ہے اوراتحاد مکمل اکثریت کے ساتھ آرہا ہے۔ وزیراعظم مودی صرف غریبوں کا ساتھ دینے کا ناٹک کررہے ہیں۔ ان کی پوری توجہ تو امیروں کواورمزید امیربنانے پرہے۔ مایاوتی نے کہا کہ اگرہمیں مرکز میں حکومت بنانے کا موقع ملتا ہے توہم سرکاری اورغیرسرکاری شعبوں میں مستقل روزگاردینے کی سہولت کریں گے۔

Loading...