وزیر اعظم اور قومی ترانہ سے متعلق سوال کا جواب نہ دینے پر مسلم مزدور کی چلتی ٹرین میں پٹائی– News18 Urdu

وزیر اعظم اور قومی ترانہ سے متعلق سوال کا جواب نہ دینے پر مسلم مزدور کی چلتی ٹرین میں پٹائی

مغربی بنگال میں ایک چلتی ٹرین میں وزیر اعظم اور وزیر اعلیٰ ممتا بنرجی کا نام نہ بتا پانے کی وجہ سے ایک مسلم مزدور کی چار لوگوں نے پٹائی کر دی۔

May 26, 2018 10:16 AM IST | Updated on: May 26, 2018 10:29 AM IST

مغربی بنگال میں ایک چلتی ٹرین میں وزیر اعظم اور وزیر اعلیٰ ممتا بنرجی کا نام نہ بتا پانے کی وجہ سے ایک مسلم مزدور کی چار لوگوں نے پٹائی کر دی۔ معاملہ کی اطلاع جمعہ کے روز پولیس نے دی ۔ پولیس افسر کے مطابق متاثرکا نام جمال مومن ہے اور وہ مہاجرمزدور ہے۔ 14 مئی کو ہاوڑہ سے مالدہ ضلع کے کالی یاچک جا رہا تھا ۔ وہ اسٹیشن سے تھوڑی دیر کے لئے نیچے اترے تو اسی درمیان چار افراد اسی اسٹیشن سے اس کے سامنے والی سیٹ پر جا کر بیٹھ گئے ۔ مزدور نے بتایا کہ جب وہ اپنی سیٹ پر آکر بیٹھا تو وہ لوگ اس سے وزیر اعظم مودی ، قومی ترانہ اور وزیر اعلیٰ ممتا بنرجی سے متعلق سوال پوچھنے لگے اور سوال کا جواب نہ دینے پر اس کی پٹا ئی کر دی۔

واضح رہےکہ مومن نے ان لوگوں کو بتایا کہ وہ پڑھا لکھا نہیں ہے۔ اسلئے اسے کسی کے بارے میں نہیں معلوم۔ اس جواب کے بعد ایک شخص نے اس سے پوچھا کہ بتاو نواز شریف کون ہے ؟ ٹائمس آف انڈیا کی خبر کے مطابق  ان چار افرا د نے مومن سے یہ سوال کیا کہ کیا تم نماز ادا کرتے ہو اور جب اس نے ہاں میں جواب دیا تو ان لوگوں نے کہا کہ ’’ شرم کرو ۔ تم روز مسجد میں نماز تو ادا کرتے ہو لیکن تمہیں قومی ترانہ نہیں آتا‘‘۔  قابل ذکر ہے کہ گروپ نے مبینہ طور پر متاثر شخص کو ’ بھارت ماتا کی جے ’ کہنے کو بھی کہا ۔

وزیر اعظم اور قومی ترانہ سے متعلق سوال کا جواب نہ دینے پر مسلم مزدور کی چلتی ٹرین میں پٹائی

علامتی تصویر: نیوز ۱۸ کریٹیو

مار پیٹ کرنے والے افراد بعد میں بڑیل اسٹیشن پر اتر گئے ۔ کالی یاچک پولیس تھانے کے انچارچ انسپکٹر سمن چٹرجی نے کہا کہ ملزمین کے خلاف ایف آئی آر درج ہو گئی ہے اور پولیس معاملہ کی تفتیش کر رہی ہے۔