فیس بک پوسٹ پر دیا تھا وزیر اعظم مودی کو عجیب وغریب مشورہ، ملا وجہ بتاو نوٹس– News18 Urdu

فیس بک پوسٹ پر دیا تھا وزیر اعظم مودی کو عجیب وغریب مشورہ، ملا وجہ بتاو نوٹس

رتلام۔ مدھیہ پردیش کے ایک اور افسر نے فیس بک پر تبصرہ کر تنازعات کو دعوت دی ہے۔

Jun 09, 2016 10:34 AM IST | Updated on: Jun 09, 2016 10:34 AM IST

رتلام۔ مدھیہ پردیش کے ایک اور افسر نے فیس بک پر تبصرہ کر تنازعات کو دعوت دی ہے۔ اس بار ایک خاتون تحصیلدار امیتا سنگھ تومر نے وزیر اعظم نریندر مودی کی تعریف کرتے ہوئے ان سے یہ تک اپیل کر دی ہے کہ وہ سیکولر لوگوں کے لئے سابق وزیر اعظم کے نام سے ایک خودکشی منصوبہ کا آغاز کریں۔

ضلع کی راوٹی کی تحصیلدار امیتا تومر کی پوسٹ میڈیا پر وائرل ہونے کے بعد رتلام ضلع کے انچارج کلکٹر ہرجندر سنگھ نے تومر کے فیس بک تبصرے کو لے کر شائع خبروں کی بنیاد پر انہیں سول سروسز كنڈكٹ رول کی خلاف ورزی کرنے کے سلسلے میں وجہ بتاو نوٹس جاری کیا ہے۔

فیس بک پوسٹ پر دیا تھا وزیر اعظم مودی کو عجیب وغریب مشورہ، ملا وجہ بتاو نوٹس

تومر نے منگل کو اپنی فیس بک وال پر وزیر اعظم نریندر مودی کی تعریف کرتے ہوئے سیکولر اور کانگریسی خیال والے لوگوں کی مذمت کی تھی۔ اس پوسٹ پر ایک سابق آئی اے ایس افسر نے اعتراض کرتے ہوئے اپنے تبصرے پوسٹ کئے تھے اور اس کے بعد سوشل میڈیا پر اس معاملے کو لے کر بحث چھڑ گئی تھی۔

انہوں نے اپنی فیس بک پوسٹ پر لکھا کہ مودی کو 'راجیو گاندھی خود کشی منصوبہ ' شروع کرنا چاہئے۔ امیتا سنگھ نے فیس بک وال پر لکھا، 'وزیر اعظم افغانستان گئے۔ وہاں مسلمانوں نے ہندوستان کے پرچم لے کر سڑک پر 'وندے ماترم' اور 'بھارت ماتا کی جے' کے نعرے لگائے۔ انہوں نے وزیر اعظم سے درخواست کی کہ وہ 'راجیو گاندھی خود کشی منصوبہ ' شروع کریں تاکہ سیکولر اور کانگریسی خیال لوگ ایسی خبر سن کر خود کشی کر سکیں۔

انچارج کلکٹر ہرجندرسنگھ نے بتایا کہ اخبارات میں تومر کے فیس بک تبصرہ کو لے کر شائع خبروں کی بنیاد پر انہیں سول سروسز كنڈكٹ رول کی خلاف ورزی کرنے کے سلسلے میں وجہ بتاو نوٹس جاری کیا گیا ہے۔