ممبئی دہشت گردانہ حملہ: دہشت گرد اجمل قصاب کو زندہ پکڑنے والا پولیس افسرمعطل

ممبئی میں 2008 میں ہوئے حملے کا ملزم دہشت گرد اجمل قصاب کو زندہ پکڑنے والے پولیس افسروں میں سے ایک کوممبئی پولیس نے معطل کردیا ہے۔

Aug 10, 2019 06:19 PM IST | Updated on: Aug 10, 2019 06:44 PM IST
ممبئی دہشت گردانہ حملہ: دہشت گرد اجمل قصاب کو زندہ پکڑنے والا پولیس افسرمعطل

ممبئی حملہ میں دہشت گرد اجمل قصاب کو زندہ پکڑنے والا پولیس افسرمعطل

دوہزارآٹھ میں ہوئے ممبئی حملےکےملزم دہشت گرد اجمل قصاب کوزندہ پکڑنے والے پولیس افسران میں سےایک کوممبئی پولیس نے معطل کردیا ہے۔ موصولہ اطلاعات کے مطابق دہشت گرد اجمل قصاب کو زندہ پکڑنے والی ٹیم میں شامل پی آئی سنجے گوولکراوردوسرے دیگرایک اے پی آئی جتیندرسنگوٹ کوممبئی پولیس کمشنرنے معطل کردیا ہے۔

ان دونوں پولیس افسران کوداود ابراہیم کے چیلے سہیل بھاملا کوچھوڑنے کےالزام میں معطل کیا گیا ہے۔ سہیل بھاملا کے خلاف لک آوٹ نوٹس جاری تھی۔ سہیل کودبئی سے لوٹتے وقت ممبئی ایئرپورٹ سے پولیس نے حراست میں لیا تھا۔

Loading...

کام میں لاپرواہی کولے کرکیا گیا معطل

اکنامک آفینس ونگ (ای اوڈبلیو) میں تعینات دونوں افسروں نے پرانےایک معاملے میں پکڑا اوردفترلےگئے۔ لیکن پوچھ گچھ کے بعد چھوڑدیا۔ اسی کےبعد سے سہیل بھاگ نکلا۔ کام میں لاپرواہی کولےکرپولیس کمشنرسنجے بروے نےدونوں کومعطل کرردیا ہےاورجانچ کے احکامات دیئے ہیں۔

ممبئی حملے کے وقت  چوپاٹی پرتعینات تھے گوولکر

ممبئی میں 26 نومبر2008 کوہوئے دہشت گردانہ حملےکے وقت پی آئی سنجے گوولکر شہید پولیس کانسٹبل تکارام اومبلےکےساتھ گرگاوں چوپاٹی پرتعینات تھے۔ اومبلےنے ساتھی دہشت گردوں کے ساتھ آرہے اجمل قصاب کی گاڑی روک لی۔ اس دوران پکڑنے کی کوشش میں اومبلے شہید ہوگئے۔ وہیں گوولکرنے ایک دہشت گرد کوگولی ماردی اوراجمل قصاب کو زندہ پکڑلیا گیا۔ گوولکرکوممبئی دہشت گردانہ حملےکےدوران دکھائی گئی بہادری کے لئے صدرجہوریہ پولیس اعزازبھی مل چکا ہے۔

Loading...