دہشت گردی کو پناہ، تربیت اور دولت فراہم کرنے والوں کے خلاف یقینی کارروائی ہو: مودی

امرتسر۔ وزیر اعظم نریندر مودی نے دہشت گردی کے معاملے پر یقینی کارروائی کے لئے عالمی برادری سے اپیل کرتے ہوئے آج کہا کہ نہ صرف دہشت گردوں، بلکہ انہیں محفوظ پناہ، تربیت اور دولت فراہم کرنے والوں کے خلاف بھی پختہ کارروائی کی ضرورت ہے۔

Dec 04, 2016 04:04 PM IST | Updated on: Dec 04, 2016 04:04 PM IST
دہشت گردی کو پناہ، تربیت اور دولت فراہم کرنے والوں کے خلاف یقینی کارروائی ہو: مودی

امرتسر۔ وزیر اعظم نریندر مودی نے دہشت گردی کے معاملے پر یقینی کارروائی کے لئے عالمی برادری سے اپیل کرتے ہوئے آج کہا کہ نہ صرف دہشت گردوں، بلکہ انہیں محفوظ پناہ، تربیت اور دولت فراہم کرنے والوں کے خلاف بھی پختہ کارروائی کی ضرورت ہے۔ مسٹر نریندرمودی نے پنجاب کے مقدس شہر امرتسر میں منعقدہ هارٹ آف ایشیا کانفرنس میں پاکستان کا نام لئے بغیر اس کو دہشت گردی کے معاملے پر گھیرنے کی کوشش کی۔ اس سے پہلے افغان صدر اشرف غنی نے پاکستان کا نام لے کر کہا کہ طالبان کے ایک سب سے اہم دہشت گرد نے اعتراف کیا ہے کہ اگر پاکستان میں محفوظ پناہ نہیں ملے تو ان کا ایک ماہ بھی ٹکنا مشکل ہے۔

وزیر اعظم نے کہا کہ"ہمیں سوچنا ہوگا کہ افغانستان میں سب سے پہلے کیا کچھ کرنے اور کس بات سے بچنے کی ضرورت ہے تاکہ ان کے شہری آزادی سے امن اور اقتصادی خوشحالی حاصل کر سکیں۔ اس کیلئے افغانستان کو آگے رکھ کر حل تلاشنے اور کارروائی کرنے کی ضرورت ہے۔ افغانستان کے لوگوں کی قیادت میں، ان کے کنٹرول والے طریقہ کار میں کوئی بھی قدم اٹھایا جانا چاہئے تبھی وہ قدم ٹک پائے گا"۔ انہوں نے کہا کہ دوسرا کام دہشت گردی کے نیٹ ورک کو تباہ کرنے کے لئے مضبوط اور اجتماعی قوت ارادی کا ثبوت دینا ہوگا۔ دہشت گردی اور بیرونی قوتوں کی طرف سے پیدا کئے جانے والے عدم استحکام سے نہ صرف افغانستان بلکہ پورے خطے کی امن وسلامتی اور خوشحالی کے لیے سب سے بڑا خطرہ پیدا ہو گیا ہے۔

مسٹرنریندر مودی نے کہا کہ مضبوط قوت ارادی کے ذریعے دکھانا ہوگا کہ وہ صرف دہشت گردوں کے خلاف نہیں بلکہ ان قوتوں کے خلاف بھی ہیں جو انہیں پناہ، تربیت اور دولت مہیا کراتے ہیں۔

Loading...

Loading...