مسلم خواتین کو با اختیار بنانے کے لئے ہے تین طلاق بل، کانگریس کواس کی حمایت کرنی چاہئے: وزیراعظم مودی– News18 Urdu

مسلم خواتین کو با اختیار بنانے کے لئے ہے تین طلاق بل، کانگریس کواس کی حمایت کرنی چاہئے: وزیراعظم مودی

وزیراعظم نے کئی دہائیوں کےبعد ملک نےایک مضبوط مینڈیٹ دیا ہے، 70 سالوں کی بیماریوں کا علاج پانچ سالوں میں کرنا مشکل تھا، عوام نےپہلےسے زیادہ دوبارہ بھروسہ جتایا ہے۔

Jun 25, 2019 07:26 PM IST | Updated on: Jun 25, 2019 09:24 PM IST

لوک سبھا میں منگل کوبھی صدرجمہوریہ رام ناتھ کووند کےخطاب پرشکریہ کی تجویزپر بحث ہوئی۔ وزیراعظم نریندرمودی نےلوک سبھا میں صدرجمہوریہ کےخطاب پراپوزیشن کا جواب دیا۔ اس دوران وزیراعظم نریندر مودی نے طلاق ثلاثہ بل پرکہا کہ یہ تین طلاق بل مسلم خواتین کو با اختیاربنانے کے لئے لایا گیا ہے۔ کانگریس کو اس بل کی حمایت کرنی چاہئے انہوں نےکہا کہ کانگریس نے خواتین کا بااختیاربنانےکا موقع چھوڑدیا ہے۔

انہوں نے کہا کہ ہم آج تین طلاق بل لےکرآئےتوکانگریس کے 35 سال کے بعد پاس اس کی حمایت کرنے کا موقع آیا۔ اسےمذہب سے جوڑکردیکھنے کی ضرورت نہیں ہے۔ کانگریس کےایک وزیرنےکہا تھا کہ مسلمانوں کی فلاح کرنا کانگریس کی ذمہ داری نہیں ہے۔ میں آپ کویوٹیوب کا لنک بھیج دوں گا، کسی نہ کسی وجہ سے یہ باتیں حقوق پرہی مرکوزرہیں، لیکن اب حقوق سے فرائض کی طرف جانے کی ضرورت ہے۔ وزیراعظم مودی کےاس بیان کے بعد کانگریسی اورکچھ دیگرپارٹی کےاراکین پارلیمنٹ میں ہنگامہ کرنےلگے۔

مسلم خواتین کو با اختیار بنانے کے لئے ہے تین طلاق بل، کانگریس کواس کی حمایت کرنی چاہئے: وزیراعظم مودی

حکومت نے طلاق ثلاثہ بل لوک سبھا میں پیش کردیا ہے، جس کی زبردست مخالفت ہورہی ہے۔

Loading...

اس سے قبل ایوان میں اپوزیشن نےتین طلاق اورموب لنچنگ جیسے دیگر موضوعات اٹھائےتھے۔ ایوان کی کارروائی بدھ کی صبح 11:00 بجےتک کے لئے ملتوی کردی گئی۔ وہیں راجیہ سبھا میں وزیراعظم نریندرمودی بدھ کو بحث کا جواب دے سکتے ہیں۔ آج راجیہ سبھا میں بی جے پی آنجہانی رکن پارلیمنٹ مدن لال سینی کوخراج عقیدت پیش کی گئی۔ وزیراعظم نےکہا کہ کئی دہائیوں کے بعد ملک نےایک مضبوط مینڈیٹ دیا ہے۔ ملک نے ایک مضبوط مینڈیٹ دیا ہے۔ ایک سرکارکودوبارہ پھرسےلائے ہیں اورپہلےسے زیادہ طاقت دے کرلائے ہیں۔ آج کےعام حالات میں ہندوستان جیسے جمہوری ملک میں ہرفرد کےلئے فخرکرنےکی بات ہے۔

وزیراعظم نےکہا کہ آزادی کے پہلےمرنےکا مزاج تھا اورآزادی کےبعد ملک کےلئےجینے کاعزم ہے۔ ہمیں آرام کا راستہ پسند نہیں، ہم ملک کےلئےجینےآئے ہیں۔ تین ہفتہ میں حکومت نےکئی اہم فیصلےلئے ہیں تاکہ ملک کوآگے بڑھایا جاسکے۔ 'کسان سمان ندھی' کا دائرہ بڑھایا گیا ہے۔ فوج کے جوانوں کے بچوں اورپولیس کے بچوں کےلئے بھی اہم فیصلے لئے گئےہیں۔ لوگوں کے حقوق سے متعلق بھی کئی بل پارلیمنٹ میں پیش ہوچکے ہیں۔ سب کو ساتھ لےکرجتنے بھی کام ہوسکتے ہیں، ہم وہ سبھی کام کررہے ہیں۔

وزیراعظم نےکہا کہ جب میں وزیراعلیٰ تھا تب مجھے ان کاموں کے لئے انشن پربیٹھنا پڑا، جس کے سبب آج 4 کروڑلوگوں کو پانی مل رہا ہے۔ راجستھان اورگجرات کے لوگ پانی کی تکلیف جانتے ہیں۔ اسی وجہ سے ہم نے آبی وسائل کی وزارت کی تشکیل کی ہے۔ پانی کا تحفظ پرہمیں زوردینا چاہئے۔ ابھی بھی پانی کا بحران بڑھتا جارہا ہے۔ پانی بحران، خواتین اوربچوں کو سب سے زیادہ پریشان کرتا ہے۔

انہوں نے کہا کہ اپوزیشن کی تقریروں میں بابا صاحب کے نام کا ذکرتک نہیں ہوتا، لیکن ایک اونچائی پرجانے کے بعد یہ نہیں نظرآتا ہے۔ پانی اورباندھوں کے لئے بابا صاحب کا کام سب سے اوپرہے۔ سردارسروبرباندھ کی بنیاد پنڈت نہرونے رکھی تھی، لیکن دہائیوں تک منظوری نہیں ملی۔ اس وقت جو6 ہزارکروڑ کا پروجیکٹ بنایا گیا اوراسے پورا ہوتے ہوتے 60 ہزار کروڑتک پہنچ گیا۔ ہم نے اسے پورا کیا۔

نریندرمودی نے کہا کہ زرعی سہولیات ہمارے ملک کی ریڑھ ہیں۔ ہمیں پرانی روایات سے باہرنکلنا ہوگا۔ کسانوں کوآگے بڑھانے کے لئے سب کو ہاتھ بڑھانا ہوگا۔ کسانوں نے فصلوں کے ذریعہ ملک کی معیشت کو طاقت دینے کا کام کیا ہے۔ اگر کسی کی تنقید کرنی ہو تو اعدادوشمارکا ہرطریقے سے استعمال کیا جاسکتا ہے۔ اسی ایوان میں جب ہم معیشت میں 11 ویں یا 13 ویں مقام پرپہنچے تھے تواس وقت میزتھپتھپائی گئی تھی، لیکن جب معیشت چھٹے مقام پرپہنچ گئی توایسا لگا کہ جانے کیا ہوگیا ہے۔ آپ کب تک اتنے اونچے رہیں گے کہ نیچے دکھائی بھی نہ دے۔ ہم سب کو مل کرملک کو اونچائی پرلے جانا ہوگا۔ انہوں نے کہا کہ 'میک ان انڈیا' کا خواب مذاق اڑایا گیا، لیکن کیا کوئی ایسا بھی ہے، جو اس کی ضرورت سے انکار کرسکتا ہے۔

Loading...