pm narendra modi says allying with pdp was bjps mahamilavat in jammu and kashmir ns– News18 Urdu

جموں وکشمیر: پی ڈی پی اوربی جے پی کا اتحاد تیل اورپانی کا ملن تھا: وزیراعظم مودی

وزیراعظم نے سابق وزیر اعظم آنجہانی اٹل بہاری واجپئی کےکشمیریت، جمہوریت اورانسانیت کے فارمولے کوہی جموں وکشمیرکےمسائل کےحل کی کنجی قراردیا۔

Apr 26, 2019 04:19 PM IST | Updated on: Apr 26, 2019 04:19 PM IST

سری نگر:  وزیر اعظم نریندر مودی نے پی ڈی پی کےساتھ بی جے پی کےاتحاد کومہا ملاوٹ قراردیتے ہوئےکہا ہےکہ یہ اتحاد تیل اور پانی کا ملن تھا۔ ایک نجی نیوز چینل کے ساتھ انٹرویو میں وزیراعظم مودی نے جموں کشمیر میں پی ڈی پی کے ساتھ اتحاد کے حوالے سے کہا 'مٹھی بھر خاندانوں نے جموں وکشمیرکوبلیک میل کرنےکا راستہ اختیارکیا ہوا ہے، مفتی صاحب تھے، تو ہمیں امید تھی کہ ہم اس سے باہرآئیں گے، لیکن وہ ہماری مہا ملاوٹ تھی، تیل اور پانی کاملن تھا'۔

انہوں نے کہا 'ہم نے اتحاد یہ کہہ کرکیا تھا کہ ہم دونوں الگ الگ جماعتیں ہیں اور ہمارا ملن ہو نہیں سکتا، لیکن عوام نے مینڈیٹ ہی ایسا دیا تھا'۔ سابق وزیراعظم آنجہانی اٹل بہاری واجپئی کےکشمیریت، جمہوریت اور انسانیت کے فارمولے کوہی جموں وکشمیر کے مسائل کے حل کی کنجی قراردیتے ہوئے مودی نےکہا 'اٹل جی کا فارمولہ کشمیریت، جمہوریت اور انسانیت ہی کام آنے والی ہے'۔

جموں وکشمیر: پی ڈی پی اوربی جے پی کا اتحاد تیل اورپانی کا ملن تھا: وزیراعظم مودی

وزیراعظم نریندر مودی: فائل فوٹو

Loading...

انہوں نے کہا کہ مٹھی بھر خاندان جوکشمیر میں ایک زبان بولتے ہیں اور دہلی آکر دوسری زبان بولتے ہیں، یہ دوغلا پن اجاگر کرنےکی ضرورت ہے اور میں ابھی وہ کررہا ہوں۔ وزیر اعظم نےکہا کہ ان خاندانوں میں ہمت ہونی چاہئےکہ وہ جو بات کشمیر میں کرتے ہیں وہی بات انہیں دہلی میں آکر بولنی چاہئے۔ قابل ذکر ہےکہ جموں کشمیرمیں بی جے پی اور پی ڈی پی کی مخلوط حکومت تین سال تک قائم رہی، جو سال گذشتہ اچانک پاش پاش ہوئی۔

Loading...