praveen togadia says bjp cheated with hindus– News18 Urdu

بی جے پی نے ہندوؤں کے ساتھ دھوکہ کیا: پروین توگڑیا

پروین توگڑیا نے کہا کہ بی جےپی نے لوک سبھا الیکشن سے اسمبلی انتخابات تک رام مندرکے مسئلےکوسیاسی شکل دے کرعوام کے ساتھ دھوکہ کیا ہے۔ بی جے پی ہمیشہ یہ کہتی ہے کہ اکثریت کی حکومت بنے گی تومندربنےگا۔

Jan 03, 2019 09:20 PM IST | Updated on: Jan 03, 2019 09:21 PM IST

اجودھیا: انترراشٹریہ وشوہندو پریشد (اے وی ایچ پی)کے صدر پروین توگڑیا نے جمعرات کو الزام عائد کیا کہ اجودھیا میں متنازعہ رام جنم بھومی مسئلے پربی جے پی نے ہندو سماج کے اعتبارکا خون کیا ہے۔ پروین توگڑیا نے یواین آئی سے کہا کہ لوک سبھا الیکشن قریب آنے کے ساتھ وزیراعظم نریندر مودی نے اجودھیا تنازعہ کا حل عدالت کےفیصلے کے بعد کہہ کر ہندوسماج کےساتھ دھوکہ کیا ہے۔

انہوں نے کہا کہ بی جےپی نے لوک سبھا الیکشن سے اسمبلی انتخابات تک رام مندرکے مسئلےکوسیاسی شکل دے کرعوام کے ساتھ دھوکہ کیا ہے۔ بی جے پی ہمیشہ یہ کہتی ہے کہ اکثریت کی حکومت بنے گی تو مندر بنے گا۔ انہوں نے کہا کہ مندرکی تعمیرکے لئے بی جے پی نے سومناتھ سے اجودھیا تک یاترا نکالی تھی۔ 8 کروڑہندوؤں سے سوا روپئے کا چندا لیا۔ 6 کروڑ افراد سے کار سیوا کرائی۔

بی جے پی نے ہندوؤں کے ساتھ دھوکہ کیا: پروین توگڑیا

پروین توگڑیا: فائل فوٹو

پروین توگڑیا نے کہا کہ مندرکی تحریک میں کئی افراد کواپنی جان بھی گنوانی پڑی۔ بعد میں بی جے پی نے 2014 کے لوک سبھا الیکشن میں 30 کروڑہندو،ووٹ کی بدولت حکومت بنائی۔ اب مسٹر مودی کا یہ کہنا بد قسمتی ہے کہ اس معاملے میں عدالت کے فیصلہ کے بعد ہی حکومت اگلا قدم اٹھایا جائے گا۔

انہوں نے کہا کہ ان کی تنظیم پورے ملک میں تحریک چلائےگی کہ رام مندر نہیں توہندوؤں کا ووٹ بی جے پی کو نہیں ملےگا۔ انہوں نے کہا ’ہم الیکشن لڑیں گےاوریہ تین باتیں رکھیں گے، ہماراعزم ہے کہ رام مندر، کسانوں کو دام، نوجوانوں کوکام، مودی جی نے نہیں کیا، ہم کرکے دکھائیں گے۔ ایک ماہ کے اندرسیاسی پارٹی کا اعلان کریں گے اورانتخابات میں حصہ لیں گے۔

Loading...