صدر جمہوریہ پرنب مکھرجی کا اعلی تعلیم کیلئے مستحکم نظام تیار کرنے کی ضرورت پر زور– News18 Urdu

صدر جمہوریہ پرنب مکھرجی کا اعلی تعلیم کیلئے مستحکم نظام تیار کرنے کی ضرورت پر زور

ہزاری باغ: صدرجمہوریہ پرنب مکھرجی نے آج یہاں کہا کہ ملک میں اعلی تعلیم کا ایک مستحکم عملی نظام تیار کرنے کی ضرورت ہے۔ مسٹر مکھرجی نے یہاں جھارکھنڈ میں وینووا بھاوے یونیورسٹی کے ساتویں جلسہ تقسیم اسناد میں کہا کہ اعلی تعلیم کو طویل مدتی سرمایہ کاری کے طور پر دیکھنا چاہئے کیونکہ اس سے اقتصادی اور ثقافتی ترقی کے ساتھ ساتھ سماجی ہم آہنگی کو بھی فروغ ملے گا۔ لیکن ایسا کرنے کے لئے اعلی تعلیم کے اداروں کاکردار واضح ہونا چاہئے اور انہیں اپنے روایتی عمل تعلیم اور تدریس سے اوپر اٹھنا ہوگا۔

Jan 09, 2016 08:47 PM IST | Updated on: Jan 09, 2016 08:47 PM IST

ہزاری باغ: صدرجمہوریہ پرنب مکھرجی نے آج یہاں کہا کہ ملک میں اعلی تعلیم کا ایک مستحکم عملی نظام تیار کرنے کی ضرورت ہے۔ مسٹر مکھرجی نے یہاں جھارکھنڈ میں وینووا بھاوے یونیورسٹی کے ساتویں جلسہ تقسیم اسناد میں کہا کہ اعلی تعلیم کو طویل مدتی سرمایہ کاری کے طور پر دیکھنا چاہئے کیونکہ اس سے اقتصادی اور ثقافتی ترقی کے ساتھ ساتھ سماجی ہم آہنگی کو بھی فروغ ملے گا۔ لیکن ایسا کرنے کے لئے اعلی تعلیم کے اداروں کاکردار واضح ہونا چاہئے اور انہیں اپنے روایتی عمل تعلیم اور تدریس سے اوپر اٹھنا ہوگا۔

مسٹر پرنب مکھرجی نے کہا کہ آج کے نئے دور میں اداروں کو مختلف طرح کے کام کرنے ہوتے ہیں جیسے کہ طلبہ میں نئی اطلاعاتی فکر کا شعور پیدا کرنا اور مضبوط انسانی وسائل کی تعمیر کرنا۔ انہوں نے کہا کہ ہندوستان کے جغرافیائی تنوع کا فائدہ مکمل طور پر اسی وقت اٹھایا جا سکتا ہے جب ان مقاصد کو تعلیم اور تحقیق کے ذریعے یقینی کر دیا جائے۔ انہوں نے کہا کہ گزشتہ برسوں میں ملک میں بہت سے اعلی تعلیم کے ادارے قائم کئے گئے ہیں، لیکن ان اداروں کے کارگربننے کا انحصار اس بات پر ہو گا کہ ان میں کتنی معیاری تعلیم مل رہی ہے۔

صدر جمہوریہ پرنب مکھرجی کا اعلی تعلیم کیلئے مستحکم نظام تیار کرنے کی ضرورت پر زور

اس سے قبل صدر جمہوریہ پرنب مکھرجی نے وینووا بھاوے یونیورسٹی کی طرف سے سابق وزیر خارجہ یشونت سنہا کو ڈی لٹ کی اعزازی ڈگری تفویض کی۔ انہوں نے کہا کہ مسٹر یشونت سنہا برسوں تک پارلیمنٹ میں ہمارے ساتھ رہے ہیں اور جن دو اہم وزارتوں (وزارت خارجہ اور وزارت مالیات) میں مجھے ذمہ داری سنبھالنے کا موقع ملا ہے، ان دونوں وزارتوں میں بھی مسٹر سنہا وزير رہے ہیں۔ 

انہوں نے اس تقریب متعدد طلبہ و طالبات کو پی ایچ ڈی کی ڈگریاں تفویض کیں اور مختلف شعبوں کے ٹاپروں کو گولڈ میڈل سے بھی نوازا۔ اس موقع پر اس پروقار تقریب میں صدر جمہوریہ کے حصہ لینے پر انہيں شکریہ کہتے ہوئے کہا کہ یہ ہزاری باغ کے لئے ایک بڑی حصولیابی ہے۔ انہوں نے کہا کہ اعزازی ڈگری ملنے سے انہیں خوشی محسوس ہورہی ہے۔

Loading...

تقریب میں 71 طلبہ و طالبات کو گولڈ میڈل ، 3 طلبہ کو بیسٹ گریجویٹ، 3643 طلبہ و طالبات کو گریجویشن ڈگری ، 1539 طلبہ کو پوسٹ گریجویٹ ڈگری اور 53 طلبہ کو پی ایچ ڈی کی ڈگریاں دی گئیں۔ تقریب میں ریاست کے گورنر دروپدی مورمو، مرکزی وزیر مملکت جینت سنہا، ریاستی وزیر تعلیم ڈاکٹر نیرا یادو وغیرہ نے بھی شرکت کی۔

Loading...