نوجوت سنگھ سدھو پرکیپٹن امریندرسنگھ کا بڑا الزام، 'مجھے ہٹاکربننا چاہتےہیں وزیراعلیٰ'۔– News18 Urdu

نوجوت سنگھ سدھو پرکیپٹن امریندرسنگھ کا بڑا الزام، 'مجھے ہٹاکربننا چاہتےہیں وزیراعلیٰ'۔

پنجاب کے وزیراعلیٰ نے اپنے ہے کابینی وزیرپرجم کرحملہ کرتے ہوئے کہا کہ وہ پارٹی کی شبیہ خراب کررہے ہیں، پارٹی کوان کے خلاف کارروائی کرنی چاہئے۔

May 19, 2019 04:32 PM IST | Updated on: May 19, 2019 04:51 PM IST

پنجاب کے وزیراعلیٰ کیپٹن امریندرسنگھ اورکانگریس لیڈرنوجوت سنگھ سدھو کی اندرونی لڑائی اب پوری طرح سے عوامی سطح پرآتی ہوئی نظرآرہی ہے۔ امریندرسنگھ نے اتوار کو نامہ نگاروں سے بات چیت میں کہا 'سدھو میری جگہ وزیراعلیٰ بننا چاہتے ہیں'۔ اس کے ساتھ ہی انہوں نےالزام لگایا کہ 'سدھو کانگریس کی شبیہ خراب کررہے ہیں، میری پارٹی کوان کے خلاف کارروائی کرنی چاہئے'۔

کیپٹن امریندرسنگھ نےاپنے وزیرنوجوت سنگھ سدھو پرنشانہ سادھتے ہوئےکہا کہ اگروہ اصلی کانگریسی ہوتے تووہ اپنی شکایتوں کےلئےالیکشن کا وقت نہیں منتخب کرتے۔ پٹیالہ میں اپنے حق رائے دہی کا استعمال کرنے جارہے کیپٹن امریندرسنگھ نے نامہ نگاروں سے بات چیت میں سدھوکولےکریہ باتیں کہیں۔

نوجوت سنگھ سدھو پرکیپٹن امریندرسنگھ کا بڑا الزام، 'مجھے ہٹاکربننا چاہتےہیں وزیراعلیٰ'۔

پنجاب کے وزیراعلیٰ کیپٹن امریندر سنگھ اور نوجوت سنگھ سدھو: فائل فوٹو پی ٹی آئی۔

Loading...

کیپٹن امریندرسنگھ نےکہا کہ 'یہ پارٹی ہائی کمان پرمنحصرکرتا ہے کہ وہ سدھو کے خلاف کیا کارروائی کرتی ہے، لیکن ایک پارٹی کےطورپرکانگریس کوڈسپلن شکنی برداشت نہیں کرنی چاہئے'۔ انہوں نے کہا کہ میری ان سے کوئی ذاتی شکایت نہیں ہے، انہیں میں بچپن سے جانتا ہوں، وہ لالچی ہیں اوروزیراعلیٰ بننا چاہتے ہیں۔

سدھو نے کی تھی کیپٹن کی تنقید

نوجوت سنگھ سدھونے جمعہ کوکیپٹن امریندرسنگھ کا نام لئے بغیران پرجم کرحملہ بولا تھا۔ انہوں نے کہا کہ 'کچھ لوگ کہتے ہیں، سیٹیں نہ ملیں تواستعفیٰ دے دیں گے، لیکن میں کہتا ہوں کہ اگربےادبی کرنے والوں پرکارروائی نہیں ہوئی تومیں استعفیٰ دے دوں گا'۔ سدھونے مزید کہا 'کوئی کہتا ہےکہ اگرسبھی 13 سیٹیں ہارگئےتواستعفیٰ دے دوں گا، لیکن میں بتانا چاہتاہوں کہ سدھوتوپہلے ہی راجیہ سبھا چھوڑکربیٹھا ہےاوراب بےادبی کرنے والوں پرکارروئی نہیں ہوئی تومیں استعفیٰ دے دوں گا'۔

واضح رہے کی کیپٹن امریندر سنگھ نےایک دن قبل کہا تھا کہ اگرلوک سبھا الیکشن میں پنجاب میں کانگریس پارٹی بہترکارکردگی نہیں کرتی ہے تووہ ذمہ داری لیتے ہوئے اپنے عہدے سے استعفیٰ دے دیں گے۔ امریندرسنگھ نےمزید کہا تھا 'پارٹی اعلیٰ کمان کا فیصلہ ہےکہ لوک سبھا الیکشن میں پارٹی امیدواروں کی جیت یا ہارکا پورا سہرا پارٹی کے وزرا اورممبران اسمبلی کوجائے گا۔ میں اس کی ذمہ داری لینےکےلئےتیارہوں۔ حالانکہ مجھے یقین ہے کہ کانگریس پنجاب میں سبھی لوک سبھا سیٹوں پرجیت حاصل کرے گی'۔

 

 

Loading...