research  french kiss and deep kiss cause sexual transmitted disease gonorrhea snm اس طرح کس کرنے سے ہو سکتی ہے موت، ریسرچ میں ہوا ہوش اڑا دینے والا انکشاف– News18 Urdu

اس طرح کس کرنے سے ہو سکتی ہے موت، ریسرچ میں ہوا ہوش اڑا دینے والا انکشاف

تحقیق کے نتیجے میں یہ بات سامنے آئی ہے کہ بہت دیر تک ساتھی کو چومنے یا فرینچ کس کرنے پر گونوریا جیسی خطرناک بیماری کا امکان بنا رہتا ہے۔

May 14, 2019 08:37 PM IST | Updated on: May 14, 2019 08:55 PM IST

ساتھی کے بیحد قریب جانے سے پیار کا احساس گہرا ہو ہی جاتا ہے لیکن ایسی کئی خطرناک بیماریوں کا خطرہ رہتا ہے جنہیں سیکشوئلی ٹرانسمٹیڈ ڈیزیز ایس ٹی ڈی یا سیکسوئلی ٹرانسمٹیڈ انفیکشن ایس ٹی آئی کہا جاتا ہے۔ ایسی ہی بیماری ہے  جو ساتھی سے غیر محفوظ جسمانی تعلقات بنانے کی وجہ سے ہوتی ہے۔  گونوریا بھی ایک ایسی بیماری ہے جو ساتھی سے غر محفوظ جنسی تعلقات بنانے جی وجہ سے ہوتی ہے۔ دنیا بھر میں یہ بیماری کافی عام ہے جو زیادہ تر لوگوں کو ہوتی ہے۔ حالانکہ اکثر یہ بیماری جینیٹلز سے پھیلتی ہے۔ لیکن حال ہی میں ہوئی ایک تحقیق میں جو بات سامنے آئی ہے وہ ہوش اڑانے والی ہے۔

تحقیق میں یہ بات سامنے آئی ہے کہ گونوریا ساتھی کو کس کرنے سے بھی پھیلتا ہے۔ کس کرنے پر یہ ساتھی کے گلے کو بری طرح سے متاثر کرسکتا ہے۔ دراصل اس سلسلے میں سیکشوئلی ٹرانسمیٹیڈ انفیکشن نام کی ایک میگزین میں چھپی تحقیق کے مطابق  فرینچ کس کرنے سے گونوریا کی بیماری ہوسکتی ہے۔ یہ بیماری گے یا بائے سیکشوئل مردوں میں بھی پھیلتی ہے۔ یہ بیماری ریکٹم، گلے اور آنکھوں کو پر بھی اثر ڈالتی سکتی ہے۔ اس بیماری کو خطرناک ماناجاتا ہے جس کی وجہ ہے کہ اس میں دوائیں بے اثر ثابت ہوتی ہیں۔

اس طرح کس کرنے سے ہو سکتی ہے موت، ریسرچ میں ہوا ہوش اڑا دینے والا انکشاف

علامتی تصویر

ایک ہیلتھ کیمپ میں لوگوں کو صلاح دی گئی کہ گونوریا کو روکنے کیلئے ساتھی کے قریب جانے پر  پروٹیکشن کا استعمال کرنا بہتر رہتا ہے۔ حالانکہ تحقیق کے نتیجے میں یہ بات سامنے آئی ہے کہ بہت دیر تک ساتھی کو چومنے یا فرینچ کس کرنے پر گونوریا جیسی خطرناک بیماری کا امکان بنا رہتا ہے۔ اس سلسلے مں سال 2016۔17 کے درمیان آسٹریلیا کے میلبرن میں پبلک ہیلتھ سروس نے تقریبا 3100 گے یا بائے سیکشوئل مردوں کے خون سیمپل کی جانچ کی اور اس کا نتیجہ  کئے