کشمیر میں بڑے پیمانے پر سرچ آپریشن ، آرمی چیف نے کہا : پاکستان کی بربریت کا ہم ضرور لیں گے بدلہ

فوج کے سربراہ جنرل بپن راوت نے کہا کہ ہم اپنے مستقبل کے منصوبوں کے بارے میں پہلے باہر بات نہیں کرتے۔ ہم کارروائی کے بعد تفصیل دیتے ہیں۔

May 04, 2017 07:15 PM IST | Updated on: May 04, 2017 07:50 PM IST

نئی دہلی: پاکستان کے فوجیوں کی طرف سے ہندستان کی سرحد میں گھس کر دو ہندستانی جوانوں کو قتل اور انکی لاشوں کی بے حرمتی کئے جانے کے تین دن بعد آج فوج کے سربراہ نے کہا کہ سیکورٹی فورسز پڑوسی ملک کی اس قابل مذمت کارروائی کا بدلہ ضرور لیں گی۔ سیکورٹی فورسز کی تیاریوں کے بارے میں بات چیت کرتے ہوئے فوج کے سربراہ جنرل بپن راوت نے کہا کہ ہم اپنے مستقبل کے منصوبوں کے بارے میں پہلے باہر بات نہیں کرتے۔ ہم کارروائی کے بعد تفصیل دیتے ہیں۔ ہم قدم اٹھا رہے ہیں، ہم نے صورتحال کو دیکھتے ہوئے دراندازی روکنے کے لئے اپنی چوکسی بڑھا دی ہے۔

جنرل راوت نے کہا کہ فوج کی طرف سے شوپیاں ضلع سمیت جموں کشمیر کے کئی حصوں میں آج چلا ئی گئی تلاشی مہم نئی نہیں ہے اور یہ ایک معمول کی کارروائی ہے۔ انہوں نے کہا کہ بینکوں کو لوٹا گیا ہے اور پولیس اہلکاروں کا قتل ہواہے ۔ اس لئے وہاں بڑے پیمانے پر مہم چلائی گئی ہے۔ انہوں نے کہا کہ آج کی مہم کا مقصد صورت حال کو کنٹرول میں لانا ہے۔ انہوں نے کہا کہ جنگجوؤں کی دراندازی کی کوششیں موسم گرما میں بڑھنے والي ہے کیونکہ برف پگھلنے والی ہے۔ ایسا ہر سال ہوتا ہے۔ فوج نے اس سے نمٹنے کے لیے برف پگھلنے سے پہلے ہی پوری تیاری کر لی ہے۔

کشمیر میں بڑے پیمانے پر سرچ آپریشن ، آرمی چیف نے کہا : پاکستان کی بربریت کا ہم ضرور لیں گے بدلہ

file photo - PTI

ادھر جموں و کشمیر میں بڑے پیمانے پر تلاشی مہم چلائی جارہی ہے ۔ جمعرات کو صبح سے جاری اس آپریشن میں سیکورٹی فورس شوپیاں کے تقریبا 30 سے ​​40 گاوںکو گھیر کر سرچ کر رہے ہیں، لیکن ایک مرتبہ پھر فوج کی کارروائی میں مقامی لوگوں رکاوٹ ڈال رہے ہیں۔ مقامی لوگوں کی طرف سے جاری پتھراؤ سے سیکورٹی فورسز کے مہم میں خلل پڑ رہا ہے۔

فوج کے سرچ آپریشن کے دوران پتھرا سے نمٹنے کیلئے شوپيا میں اب ہیلی کاپٹر کے ذریعہ بھی سرویلانس کیا جا رہا ہے۔ پولیس کے ایک افسر نے بتایا کہ سکیورٹی فورسز نے دہشت گردوں کی موجودگی کی معلومات ملنے کے بعد شوپیاں ضلع کے جین پور کے چھ دیہات میں یہ مہم شروع کی ۔

Loading...

خیال رہے کہ رواں ماہ جنوبی کشمیر کے کئی بینکوں میں بالخصوص شوپیاں اور پلوامہ ضلع کے بینکوں میں متعدد حملے کئے گئے ہیں۔ پولیس افسر نے بتایا کہ آدھی رات کو شروع کی گئی اس مہم میں بڑی تعداد میں سیکورٹی فورس شامل ہیں۔ افسر نے بتایا کہ اگرچہ ان علاقوں میں کچھ گروپوں کے سیکورٹی فورسز پر پتھراؤ کرنے سے مہم رکاوٹ پیدا ہو رہی ہے۔

خیال رہے کہ گزشتہ 2 ہفتوں میں دہشت گردوں کے 4 سے 5 ویڈیوز سامنے آئے ہیں اور ساتھ ہی ساتھ دہشت گردوں نے بینک لوٹنے اور ہتھیار لوٹنے کی کئی وارداتوں کو انجام دیا ہے۔ اب فوج دہشت گردوں کے ویڈیو سے جگہ کی شناخت میں مصرف ہوگئی ہے۔

Loading...

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز