بہرائچ: 45 دنوں میں بخار سے 70 معصوم بچوں کی موت سے ہلچل– News18 Urdu

بہرائچ: 45 دنوں میں بخار سے 70 معصوم بچوں کی موت سے ہلچل

بچوں کی اموات کے بڑھتے ہوئے اعدادوشمارکے بعد پورے اسپتال احاطے میں کھلبلی مچ گئی ہے۔

Sep 18, 2018 04:39 PM IST | Updated on: Sep 18, 2018 04:44 PM IST

بہرائچ ضلع میں بخارسے 45 دنوں میں 70 معصوموں کی ضلع اسپتال میں علاج کے دوران موت ہوگئی ہے جبکہ 86 لوگوں کوعلاج کے لئے ضلع اسپتال میں داخل کرایا گیا ہے، جن میں سے کئی معصوموں کی حالت سنگین بتائی جارہی ہے۔

اس بیماری کا سب سے زیادہ شکاربچے ہورہے ہیں۔ مریضوں کی تعداد میں تیزی سے ہورہے اضافہ کے سبب اسپتال میں بیڈ تک خالی نہیں ہے، جس کے سبب مریضوں کا علاج زمین پر بیڈ لگا کرکیا جارہا ہے۔ اموات کے بڑھتے ہوئے اعدادوشمارکے بعد پورے اسپتال احاطے میں ہلچل مچ گئی ہے۔

بہرائچ: 45 دنوں میں بخار سے 70 معصوم بچوں کی موت سے ہلچل

ہرائچ اسپتال میں بچوں کی تصویر۔

سی ایم ایس ڈاکٹراوپی پانڈے نے بتایا کہ اسپتال میں بہرائچ ہی نہیں شراوستی، گونڈہ اوربلرام پورکے اضلاع سے مریض آتے ہیں، جس کی وجہ سے اسپتال میں مریضوں کی تعداد میں تیزی سے اضافہ ہوا ہے۔

یہ بھی پڑھیں:    کیرلا: سیلاب سے زبردست تباہی، 324 لوگوں کی اموات، دو لاکھ لوگ بے گھر

انہوں نے بتایا کہ گزشتہ 24 گھنٹے کے دوران پانچ بچوں کی موت ہوچکی ہے۔ اس میں دو بچے برتھ اسپیسیا سے متاثر تھے، دوبچوں کی دماغی بخارسے اورایک بچے کی نمونیا سے موت ہوئی ہے۔ وہیں گزشتہ 24 گھنٹے میں اسپتال میں 86 مریض داخل کئے گئے ہیں، جبکہ ضلع اسپتال کے چلڈرن وارڈ  (بچوں کے وارڈ) میں 40 بیڈ ہی دستیاب ہیں۔

یہ بھی پڑھیں:    روہتک کے نالے میں ملی 6 سال کی بچی کی لاش، ریپ کے بعد قتل کا اندیشہ

معصوموں کا علاج کرارہے لوگ اسپتال انتظامیہ پرلاپرواہی کا الزام لگارہے ہیں۔ ان کا کہنا ہے کہ یہاں وقت پرعلاج نہیں ہورہا ہے۔ ان بچوں کے اہل خانہ کو خوف ہے کہ کہیں زمین پر لٹاکرعلاج کرنے سے بچوں میں کوئی اورانفکشن نہ ہوجائے۔

بہرائچ سے طاہرحسین کی رپورٹ