shivpal singh yadav declares his alliance with peace party na عام انتخابات 2018: شیوپال یادو کی پرگتی شیل سماج وادی پارٹی اور پیس پارٹی کا اتحاد– News18 Urdu

عام انتخابات 2018: شیوپال یادو کی پرگتی شیل سماج وادی پارٹی اور پیس پارٹی کا اتحاد

اتحاد کے اعلان کے بعد میڈیا نمائندوں سے بات کرتے ہوئے پی ایس پی ایل سربراہ شیو پال سنگھ یادو نے کہا’’ کسان، نوجوان اور اقلیتوں کا بی جے پی کے ذریعہ استحصال کیا گیا ہے۔

Mar 19, 2019 06:02 PM IST | Updated on: Mar 19, 2019 06:04 PM IST

عام انتخابات کے پیش نظر اتحاد کے لئے کانگریس اور دیگر سیکولر پاٹیوں سے بات نہ بننے کے بعد اترپردیش کے سابق وزیر شیوپال سنگھ یادو کی قیادت والی پرگتی شیل سماج وادی پارٹی لوہیا (پی ایس پی ایل) نے منگل کو ڈاکٹر ایوب کی پیس پارٹی اور راشٹریہ کرانتی سماجوادی پارٹی سے ہاتھ ملایا ہے۔ اگرچہ ان سیاسی پارٹیوں نے اتحاد کے بعد اپنی پارلیمانی سیٹوں کی تعداد پر کوئی فیصلہ نہیں کیا ہے۔ لیکن سربراہوں کو پوری امید ہے کہ اسے جلد ہی حل کرلیا جائے گا۔ ان تمام کے درمیان تینوں پارٹیوں نے اپنے مقصد کو واضح کرتےہوئے کہا کہ ان کا ہدف بی جے پی کو مرکز ی سیاست سے بے دخل کرنا ہے۔

اتحاد کے اعلان کے بعد میڈیا نمائندوں سے بات کرتے ہوئے  پی ایس پی ایل سربراہ شیو پال سنگھ یادو نے کہا’’ کسان، نوجوان اور اقلیتوں کا بی جے پی کے ذریعہ استحصا ل کیا گیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ ’’ میں نے سماجوادی، بہوجن سماج پارٹی اور کانگریس سےاتحاد کی ہر ممکن کوشش کی لیکن بدقستمی سے ہم کامیاب نہیں ہوسکے۔ انہوں نے دعوی کیا کہ مولانا توقیر رضا خان نے دیگر علماء کے ساتھ ان کی پارٹی کی حمایت کا اعلان کرتے ہوئے اتحاد میں شمولیت اختیار کی ہے۔

عام انتخابات 2018: شیوپال یادو کی پرگتی شیل سماج وادی پارٹی اور پیس پارٹی کا اتحاد

تصویر: سوشل میڈیا

شیوپال نے کہا کہ میں بی جے پی سے مقابلے کے لئے سیکولر مورچے کی تشکیل کے لئے ہرممکن کوشش کر رہا ہوں اور متعدد نے اتحاد میں شمولیت بھی اختیار کی ہے۔ انہوں نے یہ بھی دعوی کیا کہ ان کا مورچہ بی جے پی کو اقتدار سے بے دخل کرنے میں کامیاب ہوگا۔ پیس پارٹی کے ڈاکٹر ایوب نے کہا کہ چھوٹی پارٹیاں مورچے کو اپنی حمایت دینے کے بجائے اپنی حصہ داری مانگ رہی ہیں۔ لیکن یہ کافی مایوس کن ہے کہ کچھ سیکولر پارٹیاں کنفیوژن پیدا کر رہی ہیں جو مورچہ کو کمزور کررہا ہے۔ انہوں نے کہا کہ بی جے پی کو شکست دینے کے لئے متعدد پارٹیوں نے ہم سے ہاتھ ملایا ہے اور جلد ہی مزید پارٹیاں ہم سے جڑیں گی۔

Loading...

Loading...