آرٹیکل 370: تمام عرضیوں میں تکنیکی خامیاں۔ ترمیم شدہ عرضداشت داخل کی جائیں: سپریم کورٹ 

جسٹس رنجن گوگوئی نے سوال کیاہے کہ یہ کس طرح کی عرضی ہے؟۔ سپریم کورٹ نے عرضی گذار کی سرزنش کی اور اس معاملہ کی سماعت کوآئندہ ہفتے تک ملتوی کردیاہے

Aug 16, 2019 12:36 PM IST | Updated on: Aug 16, 2019 12:45 PM IST
آرٹیکل 370: تمام عرضیوں میں تکنیکی خامیاں۔ ترمیم شدہ عرضداشت داخل کی جائیں: سپریم کورٹ 

آرٹیکل 370: تمام عرضیوں میں تکنیکی خامیاں۔ ترمیم شدہ عرضداشتیں داخل کی جائیں: سپریم کورٹ۔(تصویر:نیوز18 اردو)۔

دفعہ 370پر سپریم کورٹ میں اب اگلے ہفتے سماعت ہوگی۔عدالت نے عرضداشت گذاروں کو ترمیم شدہ عرضداشت داخل کرنے کی ہدایت دی ہے۔سماعت کے دوران چیف جسٹس آف انڈیا، جسٹس رنجن گوگوئی نے سوال کیاہے کہ یہ کس طرح کی عرضی ہے؟۔ سپریم کورٹ نے عرضی گذار کی سرزنش کی اور اس معاملہ کی سماعت کوآئندہ ہفتے تک ملتوی کردیاہے۔چیف جسٹس آف انڈیا نے کہا کہ یہ آرٹیکل 370 کی منسوخی پردائر کی گئی عرضداشت پڑھنے کے لیے عدالت نے آدھا گھنٹے کا وقت ضائع کردیا لیکن ان عرضداشتوں میں تکنیکی خامیاں پائی گئیں ہیں۔

کشمیر ٹائمس کی صحافی انورادھا بھسین کی عرضی پرسماعت کرتے ہوئےسپریم کورٹ نےکہا کہ کشمیر میں مواصلاتی نظام کو بحال کرنے کے لیے حکومت کووقت دیاجاناچاہیے۔ عدالت نے کہا کہ جموں وکشمیر میں لینڈ لائن فون کام کررہے ہیں اور میڈیا کو اب دشواری نہیں ہوگی۔ عدالت میں حکومت کے وکیل نے کہا کہ سکیورٹی ایجنسیوں پربھروسہ کجیئے وہ حالات کو بہترکرنے کے لیے جام کررہے ہیں۔

Loading...