خواتین کے داخلہ پر تنازع، مسجدوں میں نماز بھی پڑھا رہی ہیں خواتین– News18 Urdu

خواتین کے داخلہ پر تنازع، مسجدوں میں نماز بھی پڑھا رہی ہیں خواتین

خواتین مسجدوں میں نماز پڑھ سکتی ہیں۔ خواتین امامت کرتے ہوئے دوسری خواتین کو نماز بھی پڑھا سکتی ہیں

Apr 16, 2019 01:05 PM IST | Updated on: Apr 16, 2019 01:05 PM IST

مسلم خاتون امامت( نماز پڑھانا) کر سکتی ہے یا نہیں۔ خاتون کے پیچھے مرد نماز پڑھ سکتے ہیں یا نہیں۔ یہ معاملہ پہلے بھی بحث کا موضوع بن چکا ہے۔ یہ معاملہ تب اٹھا تھا جب کیرالہ سے سامنے آئے ایک ویڈیو میں ایک خاتون کچھ مردوں کو جمعہ کی نماز پڑھاتے ہوئے دکھائی گئی تھی۔

تازہ معاملہ مسجدوں میں خواتین کو نماز پڑھنے کی اجازت دینے کو لے کر ہے۔ اس سلسلہ میں سپریم کورٹ میں ایک عرضی داخل کی گئی ہے۔ اسلامک پیس اینڈ ڈیولپمنٹ فاؤنڈیشن کے صدر محمد اقبال کا کہنا ہے ’’ خواتین کے نماز پڑھنے کے لئے ملک میں کئی مسجدیں ہیں۔ کچھ جگہوں پر ایک خاتون دوسری خواتین کی امامت بھی کر رہی ہے۔ مالیگاؤں، مہاراشٹر کے مدرسہ جامعہ محمدیہ کے کیمپس میں بنی ایک مسجد میں لڑکیاں نماز پڑھتی ہیں۔ ان کی نماز خاتون امام ہی پڑھاتی ہیں‘‘۔

خواتین کے داخلہ پر تنازع، مسجدوں میں نماز بھی پڑھا رہی ہیں خواتین

علامتی تصویر: فائل فوٹو

Loading...

وہیں، اس بارے میں مفتی عمران کا کہنا ہے ’’ یہ کہنا غلط ہے کہ خواتین کے پیچھے مردوں کی نماز نہیں ہو سکتی ہے۔ یا خواتین مسجدوں میں نماز نہیں پڑھ سکتی ہیں۔ خواتین تراویح کی نماز مردوں کو پڑھا سکتی ہیں۔ لیکن اس کے ساتھ کچھ شرطیں ہیں۔ جیسے اس نماز کے دوران مرد اور خواتین دونوں ہی لوگ شامل رہیں۔ صحیح بات تو یہ ہے کہ یہ کوئی ایشو نہیں ہے۔ لیکن لوک سبھا الیکشن کے مدنظراسے ایشو بنایا جا رہا ہے‘‘۔

وہیں، آل انڈیا مسلم ویمن پرسنل لا بورڈ کی قومی صدر شائستہ عنبر کا کہنا ہے’’ خواتین مسجدوں میں نماز پڑھ سکتی ہیں۔ خواتین امامت کرتے ہوئے دوسری خواتین کو نماز بھی پڑھا سکتی ہیں۔ لیکن ایک خاتون مردوں کی امامت کر سکتی ہے یا نہیں، مرد خاتون کے پیچھے نماز پڑھ سکتے ہیں یا نہیں اس معاملہ میں ہمیں شریعت پر عمل کرنا چاہئے۔ قرآن کی روشنی میں مفتی حضرات کیا کہتے ہیں اسی کو ماننا چاہئے‘‘۔

ناصر حسین کی رپورٹ

Loading...