آدھار کارڈ پرائیویسی معاملہ میں سپریم کورٹ کا اپنا فیصلہ رکھا محفوظ– News18 Urdu

آدھار کارڈ پرائیویسی معاملہ میں سپریم کورٹ کا اپنا فیصلہ رکھا محفوظ

سپریم کورٹ نے رازداری کے حق کو بنیادی آئینی حق ماننے یا نہ ماننے کے سوال پر آج اپنا فیصلہ محفوظ کر لیا۔

Aug 02, 2017 09:04 PM IST | Updated on: Aug 02, 2017 09:04 PM IST

نئی دہلی: سپریم کورٹ نے رازداری کے حق کو بنیادی آئینی حق ماننے یا نہ ماننے کے سوال پر آج اپنا فیصلہ محفوظ کر لیا۔ چیف جسٹس جگدیش سنگھ کیہر کی صدارت والی نو رکنی آئینی بنچ نے اس معاملے میں مختلف درخواست گزاروں، مرکزی حکومت اور آدھار اتھاریٹی کی وسیع دلیلیں سننے کےبعد فیصلہ محفوظ کرلیا۔

اٹارني جنرل کے کے وینو گوپال نے رازداری کے معاملے میں سپریم کورٹ کے سامنے مرکزی حکومت کا موقف رکھا۔ آئینی بنچ کے دیگر ارکان میں جسٹس روهنٹن ایف نریمان، جسٹس سنجے کشن کول، جسٹس ابھے منوہر سپرے، جسٹس ڈی وائی چندرچوڑ، جسٹس ایس عبد النذیر، جسٹس ایس اے بوبڈے، جسٹس آر کے اگروال اور جسٹس جستی چیلمیشورشامل تھے۔

آدھار کارڈ پرائیویسی معاملہ میں سپریم کورٹ کا اپنا فیصلہ رکھا محفوظ