مشورہ سے لےکر احتیاط تک، سینٹرل ہال میں وزیراعظم نریندرمودی کی تقریرکی 10 باتیں۔– News18 Urdu

مشورہ سے لےکر احتیاط تک، سینٹرل ہال میں وزیراعظم نریندرمودی کی تقریرکی 10 باتیں۔

این ڈی اے قانون ساز پارٹی کا لیڈرمنتخب ہوجانے کے بعد وزیراعظم مودی نے پارلیمنٹ کے سینٹرل ہال میں تقریباً 75 منٹ کی تقریرکی۔ اس دوران انہوں نے اراکین پارلیمنٹ سے بغیر بھید بھاو کے کام کرنے کا مشورہ دیا۔ 

May 26, 2019 12:03 AM IST | Updated on: May 26, 2019 12:11 AM IST

وزیراعظم کے طورپرنریندر مودی دوسری مدت کا آغازکرنے جارہے ہیں۔ نریندرمودی نے ہفتہ کواین ڈی اے قانون سازپارٹی کا لیڈر منتخب ہونے کے بعد خطاب کیا۔ اس دوران انہوں نےکہا کہ ان کی سرکاراب 'نئی توانائی کےساتھ، نئے ہندوستان کی تعمیرکے لئے نیا سفر' شروع کرے گی۔ انہوں نے ملک میں اقلیتوں کے ساتھ ہوئے دھوکے کا بھی ذکرکیا۔

نریندرمودی نے این ڈی اے کےنومنتخب ممبران پارلیمنٹ سےکہا کہ اقلیتوں کےساتھ ووٹ بینک کی سیاست کوانجام دیا گیا، جیسےاس ملک میں سیاسی پارٹیوں نےغریبوں کوچھلا ویسا ہی کچھ اقلیتوں کے ساتھ بھی ہوا۔ یہ بدقسمتی رہی کہ ملک کےاقلیتوں کے ساتھ چھلاوا کر کے انہیں الجھن اورخوف کے ماحول میں رکھا گیا۔ انہوں نے نومنتخب اراکین سے بغیربھید بھاو کے کام کرنے کے لئے بھی کہا۔ تقریباً 75 منٹ کی تقریرکےدوران وزیراعظم نے کونسی 10 بڑی باتیں کہیں، چلئے آپ کو بتاتے ہیں۔

مشورہ سے لےکر احتیاط تک، سینٹرل ہال میں وزیراعظم نریندرمودی کی تقریرکی 10 باتیں۔

وزیراعظم نریندرمودی

Loading...

دنیا کے لئے آئیڈیل ہے ہندوستان کا الیکشن

وزیراعظم مودی نے کامیابی کے ساتھ لوک سبھا الیکشن کرانے کےلئے الیکشن کمیشن کی تعریف کی اورکہا کہ پوری دنیا کی توجہ ہندوستان کے اس الیکشن پرتھی۔ انہوں نے کہا کہ الیکشن کتنا بڑا ہوتا ہے، کتنا وسیع ہوتا ہے، اس کے انتظامات کتنی اہم ہوتے ہیں، یہ دنیا کے لئے بہت بڑا آئیڈیل  ہے۔ وزیراعظم مودی نے الیکشن کمیشن، ریاستی الیکشن کمیشن، سرکاری ملازمین، سیکورٹی اہلکاروں کوالیکشن میں تعاون کے لئے شکریہ ادا کیا۔ وزیر اعظم مودی نےکہا 'بہترطریقےسے ہندوستان کی جمہوریت کے اس میلےکو دنیا کے سامنے مزید مستحکم بنانے کےلئے تعاون دینے والے ان سبھی کا دل سے بہت بہت شکریہ اور استقبال کرتا ہوں'۔

زبردست مینڈیٹ سے بڑھتی ہیں ذمہ داریاں

الیکشن میں این ڈی اے کو زبردست اکثریت حاصل ہوئی ہے۔ اس پروزیراعظم مودی نےکہا کہ زبردست مینڈیٹ ذمہ داریوں کو بھی بہت بڑھا دیتا ہے۔ حالانکہ انہوں نے کہا کہ ذمہ داریوں کو ہم خوشی سے قبول کرنے کے لئے نکلے ہوئے لوگ ہیں۔ اس کے لئے نئی توانائی، نئی امنگ کے ساتھ ہمیں آگے بڑھنا ہے۔

طاقت کو خارج کردیتا ہے ووٹر

وزیراعظم نے ہندوستانی رائے دہندگان کو بیداربتاتے ہوئے کہا کہ اقتدارکا رتبہ اسے متاثرنہیں کرتا ہے۔ انہوں نے کہا کہ طاقت جتنی سمٹتی  جائے گی، عوام کا آشیرواد اتنا ہی بڑھتا جائے گا۔ اس کے ساتھ ہی انہوں نے اپنے آپ کو دیگراراکین پارلیمنٹ جیسا ہی بتایا۔ انہوں نے کہا 'میں بھی آپ میں سے ایک ہوں، آپ کے برابرہوں، ہمیں کندھے سے کندھا ملاکرچلنا ہے، این ڈی اے کی یہی طاقت اورخصوصیت ہے'۔

اس الیکشن نے دلوں کو جوڑا

وزیراعظم نے لوک سبھا الیکشن 2019 کو دلوں کو جوڑنے والا الیکشن بتایا۔ انہوں نے کہا 'عام طورپرکہا جاتا ہے کہ الیکشن بانٹ دیتا ہے، دوریاں پیدا کرتا ہے، دیواربنا دیتا ہے، لیکن 2019 کے الیکشن نے دیواروں کوتوڑنے کا کام کیا ہے۔ اس الیکشن نے دلوں کو جوڑنے کا کام کیا ہے'۔ وزیراعظم مودی نے کہا کہ یہ الیکشن سماجی اتھاد کا آندولن بن گیا۔ انہوں نے کہا کہ 'سمتا بھی، ممتا بھی،  سمبھاو بھی اورممبھاو بھی، کے ماحول نے اس الیکشن کو نئی اونچائی دی ہے'۔

غریبوں اوراقلیتوں کے ساتھ ہوا دھوکہ

وزیراعظم مودی نے کہا کہ 2014 سے 2019 ہم نے غریبوں کے لئے سرکارچلائی اور2019 میں یہ حکومت غریبوں نے بنائی۔ غریبوں کے ساتھ جو چھلاوا چل رہا تھا، اس چھل میں ہم نے چھید کیا ہے۔ اس کے ساتھ ہی انہوں نے کہا کہ جیسا غریبوں کے ساتھ ہوا ہے، ویسا ہی چھل ملک کے اقلیتوں کے ساتھ ہوا ہے۔ مودی نے کہا کہ ووٹ بینک کی سیاست میں اقلیتوں کو دباکررکھا گیا  اوران کا صرف استعمال کیا گیا۔ وزیراعظم مودی نے کہا کہ ہمیں اس چھل میں بھی چھید کرنا ہے اوران کا (اقلیتوں) کا اعتماد جیتنا ہے۔

وی آئی پی کلچر سے بچیں اراکین پارلیمنٹ

وزیراعظم نریندرمودی نے ممبران پارلیمنٹ کو وی آئی پی کلچرسے بچے رہنے کی تلقین کی۔ انہوں نے کہا کہ اراکین پارلیمنٹ کو ضرورت پڑنے پردیگرشہریوں کی طرح قطاروں میں بھی کھڑا ہونا چاہئے۔ وزیراعظم مودی نے لال بتی کلچرکی یاد بھی دلائی۔ انہوں نے کہا کہ اس کی کوئی اقتصادی اہمیت نہیں تھی، لیکن اس سے عوام میں مثبت پیغام گیا۔

کسی کے ساتھ بھید بھاو نہ کریں

وزیراعظم نریندرمودی نے الیکشن جیت کرآئے اراکین پارلیمنٹ کو مشورہ دیا ہے کہ وہ عوامی نمائندہ کے طورپرکسی کے ساتھ بھید بھاو نہ کریں۔ انہوں نے کہا 'عوامی نمائندہ کے لئے کوئی بھید بھاو کی سرحد نہیں ہوتی، جو ہمارے ساتھ تھے، ہم ان کے لئے بھی ہیں اورجو مستقبل میں ہمارے ساتھ چلنے والے ہیں ان کے لئے بھی ہیں'۔

ٹرمپ کو جتنے ووٹ پڑے اتنا ہمارا اضافہ

اس لوک سبھا الیکشن میں بی جے پی کا ووٹ فیصد 2014 کے مقابلے میں بڑھ گیا ہے۔ اپنی تقریرمیں وزیراعظم مودی نے اس کا بھی ذکرکیا اورکہا کہ 2014 میں بی جے پی کو جتنے ووٹ ملے اور2019 میں جو ووٹ ملے، ان میں جو اضافہ ہوا ہے، یہ اضافہ تقریباً 25 فیصد ہے۔ انہوں نے کہا کہ امریکہ کے الیکشن میں جتنے ڈونالڈ ٹرمپ کو ملے تھے، اتنا توہمارا اضافہ ہوگیا۔

متنازعہ بیانات سے بچیں اراکین پارلیمنٹ

وزیراعظم نریندرمودی نے نئے اراکین پارلیمنٹ کو متنازعہ بیانات سےبھی بچ کررہنے کا مشورہ دیا۔ انہوں نے کہا کہ عوامی طورپردیئے گئے بیان اکثرہمیں پریشان کرتے ہیں۔ وزیراعظم مودی نے اراکین پارلیمنٹ کو چھپاس (اخبارمیں تصویر) اوردکھاس (ٹی وی میں نظرآنا) سے بچنے کا مشورہ دیا۔

وزارتی عہدوں پراراکین پارلیمنٹ کو کیا محتاط

وزیراعظم مودی نے اشاروں ہی اشاروں میں اراکین پارلیمنٹ کووزارت کے عہدہ کا لالچ نہ کرنے کوکہا۔ انہوں نے کہا کہ میڈیا والے جونام چلا رہے ہیں، وہ خوفزدہ کرنے کے لئے ہیں، آپ اس خوف میں مت آئیے۔ انہوں نے یہ بھی کہا کہ کئی لوگ آپ کو کہیں گے کہ انہوں نے لسٹ میں آپ کا نام دیکھا ہے، لیکن ایسا کچھ نہیں ہوتا۔ وزیراعظم مودی نے کہا کہ 'جو کچھ ہوگا، ضوابط کے مطابق ہوگا۔ نہ کوئی اپنا ہے نہ کوئی پرایا ہے، جو کوئی بھی جیت کرآیا ہے تمام میرے ہیں۔ میرے لئے کوئی فرق نہیں پڑتا ہے'۔

 

Loading...