مغربی بنگال : بی جے پی کے وجے جلوس کو پولیس نے روکا ، پرتشدد جھڑپ میں ایس آئی سمیت تین زخمی

مغربی بنگال میں بی جے پی اور ٹی ایم سی کے درمیان سیاسی محاذ آرائی ختم ہونے کا نام نہیں لے رہی ہے ۔

Jun 08, 2019 11:38 PM IST | Updated on: Jun 08, 2019 11:38 PM IST
مغربی بنگال : بی جے پی کے وجے جلوس کو پولیس نے روکا ، پرتشدد جھڑپ میں ایس آئی سمیت تین زخمی

مغربی بنگال : بی جے پی کے وجے جلوس کو پولیس نے روکا

مغربی بنگال میں بی جے پی اور ٹی ایم سی کے درمیان سیاسی محاذ آرائی ختم ہونے کا نام نہیں لے رہی ہے ۔ ابھی دو دن پہلے ہی ممتا بنرجی نے وجے جلوس پر روک لگانے کا فیصلہ کیا ، جس کے تحت ہفتہ کو بنگال بی جے پی چیف دلیپ گھوش کی ریلی کو روک دیا گیا ۔

پولیس نے جب دلیپ گھوش کے وجے جلوس کو روکا تو بی جے پی کارکنان اور پولیس کے درمیان جھڑپ ہوگئی ۔ سیاسی ریلی کے طور پر پابندی لگانے کے باوجود جب دلیپ گھوش نے ریلی نکالی تو پولیس نے بیریکیڈ لگاکر انہیں روک دیا ، جس کی بی جے پی کارکنان نے جم کر مخالفت کی ۔

نیوز ایجنسی اے این آئی کے مطابق جنوبی دیناجپور کے گنگا رام پور میں دلیپ گھوش وجے جلوس نکال رہے تھے ، اسی دوران پولیس اور بی جے پی کارکنان کے درمیان پرتشدد جھڑپ ہوگئی۔ بتایا جارہا ہے کہ اس دوران کچھ لوگ پولیس کے ساتھ بھی ہاتھا پائی کرنے لگے ، جس کے بعد پولیس نے حالات پر قابو پانے کیلئے لاٹھی چارج کردیا ۔ اس پرتشدد جھڑپ میں ایک سب انسپکٹر اور دو دیگر لوگ زخمی ہوگئے ۔ علاج کیلئے انہیں نزدیک کے سرکاری اسپتال میں بھرتی کرایا گیا ہے ۔

Loading...