yogi adityanath calls sp candidate as babar ki aulad after ec ban ends at sambhal in uttar pradesh ns– News18 Urdu

پابندی ختم ہوتے ہی یوگی آدتیہ ناتھ نےسماجوادی پارٹی کےامیدوارکوکہا 'بابرکی اولاد'۔

یوپی کے وزیراعلیٰ نے یہ بھی کہا کہ جوشخص وندے ماترم نہیں گانا چاہتا، جوبابا صاحب کو مالاپہنانے میں عدم اطمینان محسوس کرتا ہے وہ آپ کے ووٹ کے قابل نہیں ہے۔

Apr 20, 2019 08:00 AM IST | Updated on: Apr 20, 2019 08:08 AM IST

اترپردیش کے وزیراعلیٰ یوگی آدتیہ ناتھ نے اپنے اوپرلگی پابندی ختم ہوتے ہی ایک اور متنازعہ بیان دیا ہے۔ جمعہ کوانہوں نے سماجوادی پارٹی کے امیدوارکو'بابرکی اولاد' کہہ کر خطاب کیا۔ بی جے پی کےاسٹارپرچارک کا یہ بیان ان پرالیکشن کمیشن کےذریعہ عائد کی گئی 72 گھنٹے کی پابندی ختم ہونے کےبعد آیا ہے۔

یوگی آدتیہ ناتھ اترپردیش کے سنبھل میں انتخابی تشہیرکررہے تھے۔ نیوزایجنسی اے این آئی کے مطابق اس دوران انہوں نے کہا کہ سماجوادی پارٹی کےڈاکٹرامیدوارشفیق الرحمن برق نے انہیں ایک باربتایا تھا کہ وہ مغل خاندان کے جانشین ہیں۔ انہوں نے کہا کہ 'جب میں رکن پارلیمنٹ تھا تومیں نے ایک بارسماجوادی پارٹی کے امیدوارجوخود رکن پارلیمنٹ تھے، ان سےان کےآبا واجداد کے بارے میں پوچھا توانہوں نےکہا کہ ہم بابرکے جانشین ہیں، میں حیران تھا'۔

پابندی ختم ہوتے ہی یوگی آدتیہ ناتھ نےسماجوادی پارٹی کےامیدوارکوکہا 'بابرکی اولاد'۔

یوگی آدتیہ ناتھ: فائل فوٹو

وزیراعلیٰ یوگی نےکہا 'ایک طرف ایک ایسی پارٹی کا امیدوارہے، جو بابا بھیم راو امبیڈکر اورگوتم بدھ سے متعلق مقامات کی ترقی کرتا ہے۔ دوسری طرف اپوزیشن کا ایسا امیدوارہے، جوخود کو'بابرکی اولاد' کہتا ہے'۔ انہوں نے مزید کہا کہ جوشخص وندے ماترم نہیں گانا چاہتا، جو بابا صاحب کومالا پہنانےمیں عدم اطمینان محسوس کرتا ہے، وہ آپ کے ووٹ کے قابل نہیں ہے۔

واضح رہے کہ الیکشن کمیشن نے یوگی آدتیہ ناتھ کوانتخابی تشہیرکے دوران ضابطہ اخلاق کی خلاف ورزی کا قصوروارپایا تھا۔ اس وجہ سے ان کے تشہیرکرنے پرتین دن کی پابندی لگا دی گئی تھی۔ یوگی آدتیہ ناتھ پرپابندی جمعہ کوختم ہوئی ہے۔ اس کےبعد انہوں نے اترپردیش کےسنبھل میں ایک بارپھرمتنازعہ بیان دیا ہے۔