شارجہ نہیں، اب نوئیڈا میں گھریلو میچ کھیلے گی افغانستان کی کرکٹ ٹیم– News18 Urdu

شارجہ نہیں، اب نوئیڈا میں گھریلو میچ کھیلے گی افغانستان کی کرکٹ ٹیم

نوئیڈا : ہندوستانی کرکٹ کنٹرول بورڈ اور افغانستان کرکٹ بورڈ نے جمعرات کو گریٹر نوئیڈا صنعتی ترقی اتھارٹی کے ساتھ ایک معاہدہ کیا ہے ، جس کے تحت افغانستان کی کرکٹ ٹیم نوئیڈا کے شہید وجے سنگھ اسپورٹس کمپلیکس میں اپنے گھریلو میچ کھیلے گی۔

Dec 10, 2015 11:28 PM IST | Updated on: Dec 10, 2015 11:28 PM IST

نوئیڈا  :  ہندوستانی کرکٹ کنٹرول بورڈ اور افغانستان کرکٹ بورڈ نے جمعرات کو گریٹر نوئیڈا صنعتی ترقی اتھارٹی کے ساتھ ایک معاہدہ کیا ہے ، جس کے تحت افغانستان کی کرکٹ ٹیم نوئیڈا کے شہید وجے سنگھ اسپورٹس کمپلیکس میں اپنے گھریلو میچ کھیلے گی۔

حال ہی میں اس اسپورٹس کمپلیکس کو بین الاقوامی کرکٹ کونسل کی طرف سے عارضی ارکان کے درمیان ون ڈے اور ٹی -20 میچوں کے انعقاد کی جگہ کے طور پر تسلیم کیا گیا ہے۔ اس میدان کو آئی سی سی کے عارضی رکن ممالک اور مستقل رکن ممالک کی 'اے ٹیم کے درمیان ہونے والے میچوں کے لئے بھی موزوں پایا گیا ہے۔ تاہم مستقل ارکان کے درمیان میچ کے لئے کچھ وجوہات کی بنیاد پر اجازت نہیں ملی ہے۔

شارجہ نہیں، اب نوئیڈا میں گھریلو میچ کھیلے گی افغانستان کی کرکٹ ٹیم

بی سی سی آئی صدر نے جاری ایک پریس ریلیز میں کہا کہ بی سی سی آئی کسی بھی ابھرتے ہوئے ملک کی مدد کرنے کے لیے ہمیشہ تیار ہے اور یہ اسی راہ میں بڑھا یا گیا ایک قدم ہے ۔ بی سی سی آئی کے سکریٹری انوراگ ٹھاکر نے کہا کہ افغانستان اپنا گھریلو میدان ہندوستان میں منتقل کرنے کے لیے بے حد پرجوش تھا اور بی سی سی آئی کا بھی مقصد کرکٹ کو عالمی سطح پر مقبول بنانا ہے، جس کے لئے وہ عارضی رکن ممالک کی مدد کے لیے پوری طرح تیار ہے۔

اسی سمت میں قدم بڑھاتے ہوئے ہم نے گریٹر نوئیڈا میں واقع اس اسپورٹس کمپلیکس کو افغانستان کو دینے کا فیصلہ کیا ہے۔ افغانستان کرکٹ کے چیف ایگزیکٹو آفیسر نے بی سی سی آئی کا شکریہ ادا کرتے ہوئے کہا کہ میں بی سی سی آئی اور خاص طور پر انوراگ ٹھاکر کا شکر گزار ہوں کہ انہوں نے ہمیں یہ موقع دیا۔

Loading...

افغانستان کے لئے یہ ایک تاریخی دن ہے۔ اس سے دونوں ممالک کے تعلقات مضبوط ہوں گے۔ ہم گزشتہ چند برسوں سے اس کے لئے کوشش کر رہے تھے اور آخر کار ہم کامیاب ہوئے۔ انہوں نے مزید کہا کہ مجھے پوری امید ہے کہ ہم مستقبل میں اس میدان پر مستقل رکن ممالک کی میزبانی کر سکیں گے۔ میں اس کے لئے گریٹر نوئیڈا اتھارٹی کا بھي شکریہ ادا کرتا ہوں۔

Loading...