ریگنگ کی مخالفت کرنے پر دو خاندانوں میں تنازع– News18 Urdu

ریگنگ کی مخالفت کرنے پر دو خاندانوں میں تنازع

برہانپور کے قادریہ کالج میں ریگنگ کی مخالفت کرنے پر دو طالب علموں کے کنبہ کے درمیان مارپیٹ کا معاملہ سامنے آیا ہے

Aug 12, 2015 08:36 PM IST | Updated on: Aug 12, 2015 08:49 PM IST

برہانپور : برہانپور کے قادریہ کالج میں ریگنگ کی مخالفت کرنے پر دو طالب علموں کے کنبہ کے درمیان مارپیٹ کا معاملہ سامنے آیا ہے ۔ اس واقعہ میں کچھ لوگوں کے زخمی ہونے کی بھی خبر ہے ۔ پولیس نے مقدمہ درج کرکے تحقیقات شروع کر دی ہے ۔

دراصل جین آباد کے رہنے والے اور کالج میں نیا داخلہ لینے والے صہیب کا الزام ہے کہ اس سے اسی کے گاؤں کے رہنے والے کلیم اور اس کے دو دیگر ساتھیوں نے ریگنگ کی ہے  اور جب اس نے ریگنگ کی مخالفت کی تو سینئر طالب علموں نے مل کر اس کی پٹائی کر دی ۔

ریگنگ کی مخالفت کرنے پر دو خاندانوں میں تنازع

پٹائی کرنے والے سینئروں میں سے ایک طالب علم صہیب کے ہی گاؤں کا رہنے والا کلیم تھا اس لئے اس کا لحاظ کرتے ہوئے اس نے کالج انتظامیہ سے اس بات کی شکایت نہيں كی ۔ متاثرہ طالب علم نے اپنے ساتھ ہوئے اس واقعہ کی معلومات والدین کو فون پر دی ۔

جس کے بعد گاؤں میں ہی صہیب کے والد نے کلیم کے والدین کے ساتھ اس معاملے کے تصفیہ کے لئے میٹنگ بلائی ۔ اس میں ملزم طالب علم کلیم بھی موجود تھا، جسے سب کے سامنے اس طرح ملزم بننے پر اور غصہ آ گیا اور  کلیم اور اس کے رشتہ داروں نے میٹنگ کے دوران ہی لائٹ بند کر کے دھاردار ہتھیاروں سے صہیب کے گھر والوں پر حملہ کر دیا ۔

Loading...

اس واقعہ میں فریقین کے سات افراد زخمی ہوگئے ۔ وہیں واقعہ کے بعد اور مصالحت نہ ہونے پر متاثرہ طالب علم اب کالج انتظامیہ سے ریگنگ کی شکایت کرنے کی بات کہہ رہا ہے جبکہ پولیس کے مطابق درج شکایت کی تحقیقات میں اگر ریگنگ کا الزام صحیح پایا جاتا ہے ، تو انسداد ریگنگ قانون کے تحت ملزمان کے خلاف کارروائی کی جائے گی ۔

Loading...