اوڈیشہ پولیس نے خودساختہ سنت سارتھی بابا گرفتارکیا– News18 Urdu

اوڈیشہ پولیس نے خودساختہ سنت سارتھی بابا گرفتارکیا

اڑیشہ میں پولیس کی کرائم برانچ نے متنازعہ خود ساختہ سنت سارتھی بابا کو گرفتار کر لیا۔

Aug 08, 2015 09:47 PM IST | Updated on: Aug 08, 2015 09:48 PM IST

بھونیشور :  اڑیشہ میں پولیس کی کرائم برانچ نے متنازعہ خود ساختہ سنت سارتھی بابا کو گرفتار کر لیا۔ بابا کو خصوصی تفتیشی ٹیم (ایس آئی ٹی) نے کل رات اس کے كیندرپاڑا ضلع کے باريمولا میں واقع آشرم سے کل گرفتار کیا تھا۔کرائم برانچ کے ایڈیشنل پولیس ڈائریکٹر جنرل وجے کمار شرما نے نامہ نگاروں کو بتایا کہ ایس آئی ٹی کی ٹیم نے کل بابا کو اس کے آشرم سے گرفتار کیا اور رپورٹ پیش کرنے کے ساتھ ہی اس کے خلاف معاملہ بھی درج کیا۔

مسٹر شرما نے بتایا کہ بابا کو آج عدالت کے سامنے پیش کیا جائے گا اور آگے کی پوچھ گچھ کے لئے عدالت سے اسے پانچ دن کی حراست میں دیے جانے کا مطالبہ کیا جائے گا۔ انہوں نے بتایا کہ ریاستی حکومت نے بابا کے خلاف عائد مختلف الزامات کی جانچ کرائم برانچ سے کرائے جانے کا حکم دیا ہے ۔ دوسری طرف، بھارتیہ جنتا پارٹی (بی جے پی) کی اڑیشہ شاخ نے متنازعہ خود ساختہ سنت سارتھی بابا معاملے کی عدالت کی نگرانی میں تحقیقات کرائے جانے کا آج مطالبہ کیا۔

اوڈیشہ پولیس نے خودساختہ سنت سارتھی بابا گرفتارکیا

بی جے پی کی ریاستی شاخ کے صدر کے وی سنگھ دیو اور سینئر لیڈر وجے مهاپاتر نے نامہ نگاروں کو بتایا کہ اس معاملے میں وزیر اعلی نوین پٹنائک نے کرائم برانچ سے جانچ کرائے جانے کا حکم دیا ہے لیکن انہیں اس جانچ پر بھروسہ نہیں هے۔کرائم برانچ کی شاخ اس معاملے میں انصاف نہیں کر پائے گي کیونکہ اس مبینہ سنت کے تار مقامی پولیس اہلکار اور حکمراں پارٹی کے کئی مؤثر رہنماؤں سے جڑے ہوئے ہیں ۔

بابا کی فوری طور پر گرفتاری کے مطالبے پر کیندرپاڑا شہر میں مظاہرہ کر رہے لوگوں اور پولیس کے مابین کل زبردست تصادم ہوا تھا۔ ناراض مظاہرین نے گلیوں میں بابا کے پتلے جلائے اور پولیس پر پتھراؤ کیا۔ مظاہرین کو قابو کرنے کے لئے پولیس نے لاٹھی چارج کیا اور آنسو گیس کے گولےداغے۔اس دوران پولیس نے 20 مظاہرین کو گرفتار بھی کیا. اس دوران حالت کی سنگینی کو دیکھتے ہوئے وزیر اعلی نوین پٹنائک نے كیندرپاڑا کے پولیس سپرنٹنڈنٹ کا تبادلہ کر دیا اور حالات کو قابو میں کرنے کے لئے نتن جيت سنگھ کو كیندرپاڑا کے پولیس سپرنٹنڈنٹ کے عہدے پر تعینات کیا گیا ہے۔

Loading...

 دوسری طرف اپوزیشن پارٹی بی جے پی نے الزام لگاياکہ اس کے رہنما کل جب كیندرپاڑا میں سارتھی بابا کے آشرم کے باہر پرامن طریقے سے مظاہرہ کر رہے تھے تب كیندرپاڑا کے پولیس سپرنٹنڈنٹ ستیش گجبھيے نشے میں وہاں پہنچے اور انہوں نے مظاہرین کو بے رحمی سے پیٹنا شروع کر دیا ۔ مسٹر سنگھ دیو نے بتایا کہ بی جے پی کی ضلع شاخ کے سربراہ اور وکیل دريودھن ساہو کو پولیس سپرنٹنڈنٹ نے بری طرح سے مارا پیٹا اور ایسا ہی انہوں نے دوسرے مظاہرین کے ساتھ بھی کیا۔

Loading...