این ڈی اے بھی یوپی اے کے نقش قدم پر ، شاذیہ علمی سمیت 10 لیڈروں کو پی ایس یو کمپنی میں ڈائریکٹر مقرر کیا

Jan 27, 2017 01:06 PM IST | Updated on: Jan 27, 2017 03:24 PM IST

نئی دہلی : یو پی اے حکومت کے دور میں سرکاری سیکٹر کے اداروںمیں آزاد ڈائریکٹر کے طور پر سیاستدانوں کی تقرری پر واویلا مچانے والی بی جے پی نے اب خود وہی کام کیا ہے اور اپنے متعدد لیڈروں کی پی ایس یو تقرری کی ہے۔ رواں ہفتہ این ڈی اے کی کابینہ کمیٹی نے بی جے پی کے تقریبا 10 سیاستدانوں کو پبلک سیکٹر کمپنیوں میں بطور آزاد ڈائریکٹر مقرر کیا ہے۔خیال رہے کہ جب یوپی اے حکومت نے سیاستدانوں کی تقرری کی تھی ، تو اس وقت بی جے پی نے کافی ہنگامہ آرائی کی تھی ۔

انڈین ایکسپریس کی خبر کے مطابق بی جے پی کے جن لیڈروں کو پی ایس یو کمپنیوں میں بطور آزادانہ چارج ڈائریکٹر مقرر کیا گیا ہے ، ان میں دہلی بی جے پی کی نائب صدر شاذیہ علمی، گجرات آئی ٹی سیل کی راجكا كچیريا، گجرات میں پارٹی کا اقلیتی کا چہرہ آصفہ خان، اڑیسہ میں سابق ممبر اسمبلی سرما پادھي اور بہار کی سابق ایم ایل سی کرن گھئی سنہا شامل ہیں۔

این ڈی اے بھی یوپی اے کے نقش قدم پر ، شاذیہ علمی سمیت 10 لیڈروں کو پی ایس یو کمپنی میں ڈائریکٹر مقرر کیا

ان سب کی تقرری پی ایس یو کمپنیوں میں بطور بورڈ آف ڈائریکٹر کی گئی ہے۔ ان سب کی تقرری انجینئرنگ انڈیا لمیٹڈ، ہندوستان پٹرولیم کارپوریشن لمیٹڈ، بھارت ہیوی الیکٹریکلس لمیٹڈ اور نیشنل ایلومینیم کمپنی لمیٹڈ میں کی گئی ہے۔

واضح رہے کہ ان تمام لیڈروں میں سب سے زیادہ معروف نام شاذیہ علمی کا ہے ۔ وہ دہلی انتخابات کے وقت عام آدمی پارٹی کو چھوڑ کر بی جے پی میں شامل ہو گئی تھیں۔ وہ جامعہ ملیہ اسلامیہ یونیورسٹی سے ماس كميونكیشن میں گریجویٹ ہیں۔ انہیں انجینئرنگ انڈیا لمیٹڈ میں آزاد انہ چارج ڈائریکٹر مقرر کیا گیا ہے۔

سال 2014 میں سیبی نے قوانین 49 میں ترمیم کی تھی، اس کے تحت کسی بھی کمپنی میں 50 فیصد ڈائریکٹر نان ایگزکٹو یا آزاد ہوں گے ، جن میں ایک خاتون ڈائریکٹر بھی ہوگی۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز