یوپی کے سہارنپور میں دو فرقوں کے بیچ جھڑپ کے سلسلے میں 17 افراد گرفتار

May 06, 2017 03:18 PM IST | Updated on: May 06, 2017 03:18 PM IST

سہارنپور۔  اترپردیش میں سہارنپور کے بڈگاؤں علاقے میں مہارانا پرتاپ جینتی یاترا کے دوران گزشتہ روز دو فریقوں میں تنازعہ کے بعد پرتشددجھڑپ کے سلسلے میں 17 افراد کو گرفتار کیا گیا ہے۔ دو فریقوں کے پرتشدد جھڑپ میں ایک شخص کی موت ہو گئی تھی اور 20 سے زائد افراد زخمی ہو گئے تھے۔ سینئر پولس سپرنٹنڈنٹ سبھاش چندر دوبے نے بتایا کہ صورتحال اب مکمل طورپر کنٹرول میں ہے۔ موقع پر کافی تعداد میں پولس فورس کی تعیناتی کر دی گئی ہے۔ کل شام سے کسی ناخوشگوار واقعہ کی اطلاع نہیں ہے۔ دونوں طرف سے امن برقرار رکھنے کی اپیل کی گئی ہے۔ انہوں نے کہا کہ قانون کسی کو ہاتھ میں لینے کی اجازت نہیں دی جائے گی۔

واضح ر ہے کہ مہارانا پرتاپ جینتی یاترا کے دوران ڈی جے بجانے کے سلسلے میں دلتوں اور راجپوتوں کے درمیان تنازعہ ہو گیا تھا۔ جس کے بعد دونوں طرف سے جم کر پتھر پھینکے گئے تھے۔ پتھراؤ میں ایک نوجوان کی موت ہو گئی تھی اور 20 سے زائد زخمی ہو گئے تھے۔ پولس اور انتظامیہ کے سینئر حکام نے موقع پر پہنچ کر صورتحال کو قابو میں کیا تھا۔ جھڑپ کے دوران متعدد جھونپڑیوں کو آگ کے حوالے کر دیا گیا تھا۔ صورت حال پر کنٹرول برقرار رکھنے کے لئے پولیس اور پی اے سی کے جوان موقع پر تعینات ہیں۔

یوپی کے سہارنپور میں دو فرقوں کے بیچ جھڑپ کے سلسلے میں 17 افراد گرفتار

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز