کشمیر میں امرناتھ یاترا کے پہلا دن ایک یاتری سمیت 2 افراد کی موت ، 12 دیگر زخمی

Jun 29, 2017 07:00 PM IST | Updated on: Jun 29, 2017 07:00 PM IST

سری نگر: وادی کشمیر میں جمعرات کو سالانہ امرناتھ یاترا کے پہلے دن ایک یاتری سمیت دو افراد جاں بحق ہوئے۔ وسطی کشمیر کے ضلع گاندربل کے مختصر بال تل یاترا راستے پر جہاں ایک یاتری پہاڑی سے پتھر گرآنے سے لقمہ اجل بن گیا، وہیں یاترا ڈیوٹی پر مامور انڈو تبتی بارڈرپولیس کا ایک اسٹنٹ سب انسپکٹر دل کا دورہ پڑنے سے چل بسا۔ دوسری جانب ضلع کٹھوعہ میں لکھن پورہ کے مقام پر کم از کم 12 امرناتھ یاتری اُس وقت زخمی ہوئے جب تین گاڑیاں ایک دوسرے سے ٹکرا گئیں۔

سرکاری ذرائع نے بتایا کہ بال تل یاترا روٹ پر یاترا ڈیوٹی پر مامور 42 سالہ اے ایس آئی سنجن سنگھ آف آئی ٹی بی پی 42 بٹالیں کو برابری مرگ کے مقام پر شدید دل کا دورہ پڑا۔ انہوں نے بتایا کہ اگرچہ جودھ پورہ راجستھان کے رہنے والے مسٹر سنگھ کو بال تل بیس کیمپ میں واقع اسپتال منتقل کیا گیا، تاہم وہاں ڈاکٹروں نے انہیں مردہ قرار دیا۔ بال تل یاترا روٹ پر ہی ایک یاتری دوران سفر پہاڑی سے پتھر گرآنے کے سبب لقمہ اجل بن گیا۔ سرکاری ذرائع نے یو این آئی کو بتایا کہ 50 سالہ بھوشن کوتوال ساکنہ جموں برابری مرگ کو پار کرنے کے دوران پہاڑی سے ایک بھاری برکم پتھر گرآنے کے نتیجے میں شدید زخمی ہوا۔

کشمیر میں امرناتھ یاترا کے پہلا دن ایک یاتری سمیت 2 افراد کی موت ، 12 دیگر زخمی

امرناتھ یاترا: فائل فوٹو

انہوں نے بتایا کہ زخمی کو فوری طور پر بال تل بیس کیمپ میں واقع اسپتال لے جایا گیا جہاں ڈاکٹروں نے اسے مردہ قرار دیا۔ دوسری جانب ضلع کٹھوعہ میں لکھن پورہ کے مقام پر کم از کم 12 امرناتھ یاتری اُس وقت زخمی ہوئے جب تین گاڑیاں ایک دوسرے سے ٹکرا گئیں۔ ایک پولیس عہدیدار نے حادثے کی تفصیلات فراہم کرتے ہوئے بتایا ’اترپردیش سے آئی ہوئی ایک بس جمعرات کی صبح لکھن پورہ میں گولڈن گیٹ کے نذدیک ایک ٹرک اور ایک ایس یو وی سے ٹرا گئی جس کے نتیجے میں کم از کم 12 یاتری زخمی ہوئے‘۔ انہوں نے بتایا کہ زخمیوں کو ضلع اسپتال کٹھوعہ میں داخل کرایا گیا ہے۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز