سرسید احمد خاں ہمہ جہت شخصیت کے مالک اور قوم کے تئیں وفادار تھے : پروفیسر اسفر علی خاں

علی گڑھ مسلم یونیورسٹی کے بانی سرسید احمد خاں ہمہ جہت شخصیت کے مالک اور قوم کے تئیں وفادار تھے جس سے کوئی بھی انکار نہیں کرسکتا۔

Nov 12, 2017 07:20 PM IST | Updated on: Nov 12, 2017 07:20 PM IST

علی گڑھ: علی گڑھ مسلم یونیورسٹی کے بانی سرسید احمد خاں ہمہ جہت شخصیت کے مالک اور قوم کے تئیں وفادار تھے جس سے کوئی بھی انکار نہیں کرسکتا۔ان خیالات کا اظہار او ایس ڈی وائس چانسلر پروفیسر اسفر علی خاں نے علی گڑھ ماڈرن اسکول میں منعقدہ دو صد سالہ جشنِ پیدائش تقریب سے مہمانِ خصوصی کی حیثیت سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔انہوں نے کہا کہ سرسید کی فکر اپنے زمانے سے بہت آگے کی فکر تھی اور یہی سبب ہے کہ انہوں نے آج سے150سال قبل جن جن باتوں کے لئے کوشش کی ان کو آج حکومت زور و شور کے ساتھ نافذ کرنے کے لئے کوشاں ہے۔ انہوں نے کہا کہ سرسید نے ہمیں رواداری کا درس دیا۔علی گڑھ ماڈرن اسکول کے مینیجر ڈاکٹر عاصم رضوی نے کہا کہ سرسید تعلیم کو ہی دنیا میں باعزت زندگی گزارنے کا وسیلہ سمجھتے تھے اور اسی لئے انہوں نے مسلمانوں سے سیاست سے ہٹ کر تعلیم پر توجہ مرکوز کرنے کی اپیل کی۔

کامرس شعبہ کی پروفیسر شیبا حامد نے کہا کہ ہمیں یونیورسٹی کو آرکیٹیکٹ کی نظر سے دیکھنا چاہئے کیونکہ یونیورسٹی میں تقریباً ساٹھ سے زائد ایسی عمارتیں ہیں جنہیں قومی وراثت کہا جا سکتا ہے اور ان عمارتوں کے ذریعہ یونیورسٹی کو سیاحتی مقام کے طور پر فروغ دیا جا سکتا ہے۔پروگرام کنوینرپروفیسر شکیل صمدانی نے کہا کہ سرسید سخت محنت میں یقین رکھتے تھے اور انہوں نے ایم اے او کالج کی شکل میں ہندوستان کو ایک عظیم تحفہ پیش کیا جس میں تعلیم و تربیت کا نظم کیا گیا۔انہوں نے کہا کہ سرسید خود ماہرِ قانون تھے اور اسی لئے انہوں نے آج سے تقریباً135سال قبل شعبۂ قانون قائم کیا۔

سرسید احمد خاں ہمہ جہت شخصیت کے مالک اور قوم کے تئیں وفادار تھے : پروفیسر اسفر علی خاں

ڈاکٹر عبید اقبال عاصم نے کہا کہ سرسید نے دینیات شعبہ اس لئے قائم کیا کہ یہاں کے طلبہ دینی طور پر مضبوط رہیں۔ اپنے صدارتی خطبہ میں کامرس فیکلٹی کے ڈین پروفیسر نواب علی خاں نے کہا کہ اگر ہمیں سرسید سے سچا پیار ہے تو ہمیں سرسید کے اصولوں پر چلنے کی کوشش کرنی چاہئے۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز