وسطی کشمیر کے بڈگام میں فوج کی مبینہ فائرنگ میں  25 سالہ تنویر احمد وانی کی موت ، احتجاجیوں کا فوج پر پتھراو

Jul 21, 2017 03:15 PM IST | Updated on: Jul 21, 2017 03:15 PM IST

سری نگر: وسطی کشمیر کے ضلع بڈگام میں فوج کی احتجاجی مظاہرین پر فائرنگ کے نتیجے میں ایک نوجوان کی موت ہوگئی ہے۔ ذرائع کے مطابق ضلع بڈگام کے بیروہ میں جمعہ کے روز ہڑتال کے دوران احتجاج کررہے نوجوانوں کے ایک گروپ نے فوج کی ایک گشتی پارٹی پر پتھراؤ کیا۔ اس کے جواب میں فوجی اہلکاروں نے مبینہ طور پر احتجاجی نوجوانوں پر براہ راست فائرنگ کی جس کے نتیجے میں 25 سالہ نوجوان تنویر احمد وانی شدید زخمی ہوگیا۔

ذرائع نے بتایا کہ اگرچہ تنویر احمد کو پبلک ہیلتھ سینٹر گوندی پورہ منتقل کیا گیا، تاہم وہاں ڈاکٹروں نے اسے مردہ قرار دیا۔ بتایا جارہا ہے کہ تنویر احمد پیشے کے اعتبار سے درزی تھا۔ موصولہ اطلاعات کے مطابق تنویر کی ہلاکت کی خبر پھیلنے کے بعد بیروہ میں بڑے پیمانے پر احتجاجی مظاہرے شروع ہوگئے ہیں۔

وسطی کشمیر کے بڈگام میں فوج کی مبینہ فائرنگ میں  25 سالہ تنویر احمد وانی کی موت ، احتجاجیوں کا فوج پر پتھراو

file photo

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز