کشمیر میں الیکشن کے بائیکاٹ کا پوسٹر لگانے پر تین نوجوان گرفتار، 12 اپریل کو ڈالے جائیں گے ووٹ

Apr 08, 2017 12:59 PM IST | Updated on: Apr 08, 2017 12:59 PM IST

سرینگر: جموں و کشمیر پولیس نے اننت ناگ پارلیمانی حلقہ میں 12 اپریل کو هونے والے ضمنی چناؤ کے بائیکاٹ سے متعلق پوسٹر تقسیم کرنے والے تین نوجوانوں کو گرفتار کرنے کا دعوی کیا ہے۔ایک سینئر پولیس افسر نے بتایا کہ تینوں نوجوان جنوبی کشمیر کی ایک دہشت گرد تنظیم کے نام پر یہ پوسٹر لوگوں میں تقسیم کررہے تھے۔ انہوں نے بتایا کہ ان کے دیگر ساتھیوں کی تلاش جاری ہے۔

پولیس افسر نے بتایا کہ اننت ناگ میں شاہ ہمدان اور دیگر جگہوں پر دہشت گرد تنظیم لشکر طیبہ اور حزب المجاہدین کے نام سے پوسٹر لگائے گئے ہیں جس میں لوگوں سے ان ضمنی انتخابات کا بائیکاٹ کرنے یا نتائج بھگتنے کے لیے تیار رہنے کو کہا ہے۔

کشمیر میں الیکشن کے بائیکاٹ کا پوسٹر لگانے پر تین نوجوان گرفتار، 12 اپریل کو ڈالے جائیں گے ووٹ

انہوں نے بتایا کہ دونوں تنظیموں نے ایسا کوئی بھی پوسٹر جاری کرنے سے انکار کیا ہے۔ پولیس نے انتخابی بائیکاٹ سے متعلق پوسٹر لگانے اورتقسیم کرنے کے لئے تین نوجوانوں کو گرفتار کیا ہے۔ قابل ذکر ہے کہ یہاں سے وزیر اعلی محبوبہ مفتی کے بھائی مفتی تصدق حسین (پی ڈی پی) اور غلام احمد میر (کانگریس) الیکشن لڑ رہے ہیں۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز