یوگی حکومت کا بڑا فیصلہ، سابق وزیر اعلی اکھلیش یادو کی تصویر والے 3 کروڑ سے زائد راشن کارڈ ہوں گے منسوخ

Apr 02, 2017 11:29 AM IST | Updated on: Apr 02, 2017 11:31 AM IST

لکھنو : اتر پردیش کی یوگی حکومت نے راشن کارڈ کو لے کر بڑا فیصلہ کیا ہے۔ ریاست کے تین کروڑ 40 لاکھ راشن کارڈ منسوخ کئے جائیں گے، کیونکہ ان پر سابق وزیر اعلی اکھلیش یادو کی تصویر ہے ۔ بی جے پی حکومت نے ان تمام راشن کارڈوں کو منسوخ کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔ یوگی حکومت اب نیا راشن کارڈ جاری کرے گی ، جو اسمارٹ کارڈ والا ہوگا۔ اس کارڈ میں چپ بھی لگا ہوگا۔ فی الحال کے لئے پرچی سسٹم اپنانے کا حکم دیا گیا ہے ۔ راشن کارڈ آدھار کارڈ سے بھی لنک ہوگا اور اس پر ایک بارکوڈ ہوگا۔ اسمارٹ كارڈ والے راشن کارڈ میں کوٹے کا فائدہ اٹھانے والے کیلئے کوڈ نمبر بھی دیا جائے گا۔

پرانے راشن کارڈ پر اکھلیش یادو کی تصویر اسی طرز پر لگی تھی، جیسے اکھلیش حکومت کی طرف سے بانٹے گئے لیپ ٹاپ میں لگی ہوئی تھی۔ خاص بات یہ ہے کہ 3.40 کروڑ راشن کارڈوں میں سے 2.80 کروڑ کارڈ اب تک بانٹے جا چکے ہیں، جبکہ 60 لاکھ ایسے راشن کارڈ ہیں ، جو اب تک تقسیم نہیں گئے تھے، ان کی تقسیم پر روک لگا دی گئی ہے۔

یوگی حکومت کا بڑا فیصلہ، سابق وزیر اعلی اکھلیش یادو کی تصویر والے 3 کروڑ سے زائد راشن کارڈ ہوں گے منسوخ

یوگی آدتیہ ناتھ : فائل فوٹو

خیال رہے کہ کچھ دنوں قبل اکھلیش یادو کے ڈریم پروجیکٹ گومتی ریور فرنٹ کو لے کر بھی یوگی آدتیہ ناتھ نے سوال کیا تھا کہ آخر اتنا خرچ کیوں؟' یوگی آدتیہ ناتھ گزشتہ ماہ سابق وزیر اعلی اکھلیش یادو کے ڈریم پروجیکٹ گومتی ریور فرنٹ کا جائزہ لینے بھی گئے تھے۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز