ہریانہ پنجاب تشدد : ڈیرہ سچا سودا کے 36 آشرم سیل ، رام رحیم کے 6 گارڈوں کے خلاف غداری کا کیس درج

Aug 26, 2017 03:40 PM IST | Updated on: Aug 26, 2017 03:40 PM IST

پنچ کولہ : ڈیرہ سچا سودا سربراہ گرمیت رام رحیم کو کل پنچکولہ میں سی بی آئی کی خصوصی عدالت کے جنسی استحصال معاملے میں قصوروار ٹھہرا ئے جانے کے فیصلہ کے بعد بابا کی گرفتاری کے وقت کرنال کے آئی جی کو تھپڑ مارنے والے رام رحیم کے چھ گارڈس اور دو حامیوں کے خلاف ملک سے غداری کا مقدمہ درج کیا گیا ہے۔ علاوہ ازیں سرکاری کاج میں رخنہ ڈالنے سمیت تین الگ الگ دفعات کے تحت بھی معاملہ درج کیا گیا ہے۔ بتایا جاتا ہے کہ یہ لوگ آئی جی سے اس بات کو لے کر الجھ پڑے تھے کہ وہ بابا رام رحیم کو اپنی گاڑی میں لے جائیں گے۔

ادھر ہریانہ کے ایڈیشنل چیف سکریٹری (ہوم) رام نیل نے بتایا ہے کہ اب تک ڈیرہ سچا سودا کے 36 آشرموں کو سیل کر دیا گیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ صورتحال مزید خراب ہوسکتی تھی ، لیکن ہم نے بروقت اس پر قابو پا لیا۔ پہلی گولی شام میں تقریبا 3:30 بجے چلی تھی اور 6 بجے کے بعد تشدد کا کوئی واقعہ پیش نہیں آیا۔ انہوں نے کہا کہ آبروریزی کے مقدمہ میں قصور وار ٹھہرائے جانے کے بعد رام رحیم سے زیڈ پلس سیکورٹی چھین لی گئی ہے۔

ہریانہ پنجاب تشدد : ڈیرہ سچا سودا کے 36 آشرم سیل ، رام رحیم کے 6 گارڈوں کے خلاف غداری کا کیس درج

خیال رہے کہ رام رحیم کو مجرم ٹھہرائے جانے کے بعد گزشتہ روز اس کے حامیوں نے ہریانہ اور پنجاب میں زبردست تشدد اور توڑ پھوڑ کی تھی ، جس میں 33 افراد کی موت ہوچکی ہے اور بڑی تعداد میں لوگ زخمی ہوئے ہیں۔ ہریانہ اور پنجاب کے کئی شہروں اور قصبوں میں کرفیو نافذ کردیا گیا تھا۔ تشدد پر آمادہ ہجوم نے دہلی اور اترپردیش کے غازی آباد ضلع میں کچھ مقامات پر توڑ پھوڑ کی تھی۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز