پلوامہ میں سی آر پی ایف کیمپ پر دہشت گردانہ حملہ ، 5 جوان شہید ، جیش محمد کا دعوی ، نور کی موت کا لیا بدلہ

Dec 31, 2017 12:01 PM IST | Updated on: Dec 31, 2017 09:42 PM IST

سرینگر: جموں و کشمیر کے ضلع پلوامہ میں مرکزی ریزرو پولیس فورس (سی آر پی ایف) کے کیمپ پر آج علی الصبح ہوئے دہشت گردانہ حملہ میں 5جوان شہید ہو گیا جبکہ تین دیگر زخمی ہو گئے۔سیکورٹی فورسیز نے بھی 2 دہشت گردوں کو مار گرایا ہے ۔ ادھر جیش محمد نے حملہ کی ذمہ داری قبول کی ہے۔ دہشت گرد تنظیم کا کہنا ہے کہ یہ فدائین حملہ ان کے دہشت گرد کمانڈر نورترالی کی موت کا بدلہ لینے کے لئے کیا گیا ہے۔

ذرائع کے مطابق کہ پلوامہ ضلع کے لاتھ پورا لاڈو میں دو سے تین دہشت گردوں نے سی آر پی ایف کیمپ کے مرکزی دروازے کے قریب تعینات جوانوں پر دستی بم اور خود کار ہتھیاروں سے اندھا دھند فائرنگ کرکے حملہ کرنے کے بعد دہشت گرد کیمپ میں گھس گئے۔

پلوامہ میں سی آر پی ایف کیمپ پر دہشت گردانہ حملہ ، 5 جوان شہید ، جیش محمد کا دعوی ، نور کی موت کا لیا بدلہ

پلوامہ ضلع کے لاتھ پورا لاڈو میں دو سے تین دہشت گردوں سی آر پی ایف کیمپ کے قریب تعینات جوانوں پر دستی بم اور خود کار ہتھیاروں سے اندھا دھند فائرنگ کی ۔فائل فوٹو

ریاستی پولیس کے ایک عہدیدار نے بتایا کہ حملہ آوروں کو ہلاک کرنے کے لئے فوج کی 50 راشٹریہ رائفلز ، 185 بٹالین سی آر پی ایف اور ریاستی پولیس کے اہلکار کام میں لگے ہوئے ہیں۔ انہوں نے بتایا ’سی آر پی ایف گروپ سینٹر لت پورہ اونتی پورہ میں طرفین کے مابین مسلح تصادم جاری ہے۔

ایک رپورٹ کے مطابق سی آر پی ایف ٹریننگ سینٹر پر حملے کے تناظر میں جنوبی کشمیر اور گرمائی دارالحکومت سری نگر میں ہائی الرٹ جاری کیا گیا ہے۔ مذکورہ رپورٹ کے مطابق ضلع پلوامہ میں احتیاطی طور پر موبائیل انٹرنیٹ خدمات منقطع کی گئی ہیں۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز