پولیس حراست میں موت کے معاملہ میں بریلی کے شہر کوتوال اور چار پولیس اہلکار معطل

May 26, 2017 09:01 PM IST | Updated on: May 26, 2017 09:01 PM IST

بریلی : پولیس حراست میں موت کے معاملہ میں ایس ایس پی بریلی نے شہر کوتوال اور چار پولیس اہلکاروں کو معطل کر دیا ہے ۔ کوتوالی پولیس نے گزشتہ ماہ 21 اپریل کو انوج نامی ایک شخص کو موٹر سائیکل چوری کے الزام میں حراست میں لیا تھا ۔ پولیس حراست میں اس کی حالت بگڑ گئی اور اس کو ضلع اسپتال لے جایا گیا، جہاں اس کے ابتدائی علاج کے بعد ضلع اسپتال کے ڈاکٹروں نے اسے لکھنؤ پی جی آئی ریفرکر دیا تھا۔ جہاں سے اسے كے جی ایم سی لے جایا گیا۔ ایک ماہ تین دن زیر علاج رہنے کے بعد انوج کی موت ہو گئی تھی ۔

مقتول انوج کے جسم پر چوٹوں کے کئی نشانات ملے تھے۔ اہل خانہ کا الزام ہے کہ پولیس نے پوچھ تاچھ کے نام پر انوج کی جم کر پٹائی کی، جس کی وجہ سے اس کی موت ہو گئی ۔ فی الحال ایس ایس پی نے ابتدائی جانچ میں انوج کی موت کے لیے شہرکوتوال کمل کانت ورما اور چار پولیس اہلکاروں کو ذمہ دار ٹھہراتے ہوئے معطل کر دیا ہے۔ اس معاملہ میں ڈی ایم پنکی جویل نے بھی مجسٹریٹ جانچ کا حکم دیا ہے۔

پولیس حراست میں موت کے معاملہ میں بریلی کے شہر کوتوال اور چار پولیس اہلکار معطل

دراصل 28 سال کا نوجوان انوج اتراکھنڈ کے ادھم سنگھ ضلع کی كھٹيما تحصیل کا رہنے والا تھا۔ وہ بریلی میں رہ کر پرائیویٹ نوکری کرتا تھا۔ چوپلا چوراہا کے قریب کسی کی بائک چوری ہو گئی، جس کا الزام انوج پر لگایا تھا۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز