رحم کی بھیک مانگتی رہیں خواتین، 'گئو رکشکوں' کے تشدد میں 9 سال کی بچی زخمی،11 افراد گرفتار

Apr 24, 2017 11:14 AM IST | Updated on: Apr 24, 2017 11:22 AM IST

جموں۔ جموں کے قریب ریاسی میں مبینہ طور پر گئو رکشا کے نام پر تشدد کا معاملہ سامنے آیا ہے۔ سوشل میڈیا پر گزشتہ 21 اپریل کو اپ لوڈ ایک ویڈیو تیزی سے وائرل ہو رہا ہے۔ لوگوں کی بھیڑ ایک گھر پر حملہ کرتی نظر آ رہی ہے۔ ویڈیو میں صاف نظر آ رہا ہے کہ گھر میں موجود خواتین بھیڑ سے رحم کی بھیک مانگ رہی ہیں اور موقع پر پولیس بھی موجود ہے۔ خبروں کے مطابق اس واقعہ میں 9 سال کی ایک بچی بھی شدید زخمی ہو گئی ہے۔

یہ معاملہ 21 اپریل جمعہ کی شام کا بتایا جا رہا ہے۔ معلومات کے مطابق خود کو گئو رکشک بتا رہی بھیڑ نے ایک خاندان کو اپنا نشانہ بنایا۔ موقع پر پولیس بھی موجود تھی لیکن بھیڑ 'جے شری رام' کے نعرے لگا کر تشدد کرتی رہی۔ اس معاملے میں ابھی تک 11 افراد کو گرفتار کیا گیا ہے۔ بتا دیں کہ اس خاندان کے رکن ریاسی سے کشمیر جا رہے تھے۔ ان لوگوں کو مبینہ طور پر گئو اسمگلر سمجھ کر لوگوں نے ان پٹائی کر دی۔ یہ خانہ بدوش لوگ ہیں جو اپنے مویشیوں کو ساتھ لے کر چلتے ہیں۔

رحم کی بھیک مانگتی رہیں خواتین، 'گئو رکشکوں' کے تشدد میں 9 سال کی بچی زخمی،11 افراد گرفتار

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز