آپ میں گھمسان تیز، امانت اللہ خان کو پی اے سی سے نکالنے پر کمار وشواس بضد

May 01, 2017 09:50 PM IST | Updated on: May 01, 2017 09:50 PM IST

نئی دہلی۔ ممبر اسمبلی امانت اللہ خان کے الزامات سے ناراض کمار وشواس نے پارٹی کی پی اے سی کے اجلاس میں جانے سے انکار کر دیا ہے۔ کمار کو منانے کے لئے نائب وزیر اعلی منیش سسودیا ان کے گھر گئے ہیں، لیکن ذرائع کے مطابق کمار امانت اللہ خان کو پی اے سی سے نکالنے پر اڑ گئے ہیں۔ اس نئے تنازعہ کے چلتے اب تک پی اے سی کی میٹنگ شروع نہیں ہو سکی ہے۔ منیش سسودیا، سنجے سنگھ، دلیپ پانڈے اور آتشیں مارلنا اب کیجریوال کے گھر پہنچے ہیں۔

امانت اللہ خان کے الزامات کے بعد سے آپ دو خیموں میں بٹتی نظر آرہی ہے۔ اب کپل مشرا نے بھی امانت اللہ خان کو پارٹی سے باہر کرنے کی وکالت کی ہے۔ انہوں نے کہا کہ پارٹی قیادت کے خلاف بولنے والے کو باہر کرنا چاہئے۔ الکا لامبا نے بھی امانت اللہ پر کارروائی کا مطالبہ کیا ہے۔ آپ ممبر اسمبلی مدن لال کا کہنا ہے کہ پارٹی میں کوئی دراڑ نہیں ہے۔ یہ سب میڈیا کا بنایا ہوا ہے۔ اگرچہ انہوں نے کہا کہ امانت اللہ خان نے بہت غلط کیا ہے۔ پارٹی کو لگ رہا ہے کہ غلط ہوا ہے تو امانت اللہ خان کے خلاف ایکشن لیا جانا چاہئے۔

آپ میں گھمسان تیز، امانت اللہ خان کو پی اے سی سے نکالنے پر کمار وشواس بضد

وہیں دہلی اسمبلی کے اسپیکر رام نواس گوئل کا کہنا ہے کہ جو کچھ بھی ہو رہا ہے بہت افسوسناک ہے۔ کمار وشواس پارٹی کے بانی ممبر ہیں۔ میں پارٹی کے ساتھ بعد میں جڑا۔ امانت اللہ خان کو یہاں آکر کمار جی سے ملنا چاہئے، اگر نہیں آتے ہیں تو پارٹی کو کارروائی کرنی چاہئے۔ اس سے پہلے اروند کیجریوال نے کمار کو اپنا چھوٹا بھائی بتایا تھا۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز