کپل مشرا عام آدمی پارٹی سے معطل ، پی اے سی نے لیا فیصلہ ، کیجریوال نے کہا : سچ کی جیت ہوگی

May 08, 2017 06:20 PM IST | Updated on: May 08, 2017 10:34 PM IST

نئی دہلی : عام آدمی پارٹی نے کپل مشرا کو پارٹی سے باہر نکال دیا ہے۔ پارٹی کی پارلیمانی امور کی کمیٹی کے اجلاس میں یہ فیصلہ کیا گیا ہے۔ خیال رہے کہ اس سے پہلے کپل مشرا نے پیر کو پریس کانفرنس کی تھی، جس میں انہوں نے الزام لگایا کہ اروند کیجریوال کے ساڑھو بھی اس ڈیل میں شامل تھے۔ انہوں نے بتایا کہ وزیر اعلی کے ساڑھو کے لئے 50 کروڑ کی ڈیل کروائی گئی تھی۔

ادھر کپل مشرا کے الزامات پر خاموشی توڑتے ہوئے اروند کیجریوال نے جواب دیا ہے۔ انہوں نے ٹویٹ کے ذریعے کہا کہ سچ کی جیت ہوگی۔ اروند کیجریوال نے اپنے ٹویٹ میں لکھا کہ 'جیت سچائی کی ہوگی، کل دہلی اسمبلی کے خصوصی سیشن سے اس کی شروعات ہوگی۔

کپل مشرا عام آدمی پارٹی سے معطل ، پی اے سی نے لیا فیصلہ ، کیجریوال نے کہا : سچ کی جیت ہوگی

علاوہ ازیں مشرا نے بھارتیہ جنتا پارٹی میں شامل ہونے کی قیاس آرائیوں سے صاف طور پر انکار کر دیا۔ انہوں نے کہا کہ میں پارٹی میں ہمیشہ سے بی جے پی کے خلاف بولتا رہا ہوں اور کبھی بی جے پی میں شامل نہیں ہوں گا۔ مشرا کا کہنا ہے کہ وہ منگل کی صبح سی بی آئی کو ثبوت پیش کریں گے اور اس معاملہ میں کیس درج کرائیں گے۔

ادھر دہلی اے سی بی چیف مکیش مینا پیر کو دہلی کے لیفٹیننٹ گورنر انل بیجل سے ملنے پہنچے۔ لیفٹیننٹ گورنر سے ملنے کے بعد مکیش مینا نے کہا ہے کہ کپل مشرا نے دو کروڑ کی رشوت کے معاملے میں اے سی بی سے شکایت نہیں کی ہے۔ ساتھ ہی ساتھ انہوں نے کہا کہ اے سی بی کپل کا بیان درج کرائے گی۔ مینا کا کہنا ہے کہ اس معاملات میں قانون کے مطابق کارروائی کی جائے گی۔ ادھر عام آدمی پارٹی نے الزام لگایا ہے کہ کپل مشرا بی جے پی کی زبان بول رہے ہیں۔

کیجریوال کے خلاف نہیں دے پائے ثبوت

نیوز 18 ہندی کے ذرائع کے مطابق کپل مشرا اے سی بی میں کیجریوال اور ستیندر جین پر لگائے الزامات پر کوئی ثبوت نہیں دے پائے ہیں ۔ انہوں نے صرف ٹینکر گھوٹالے سے وابستہ ثبوت ہی سونپے۔ دیگر معاملہ میں کہا کہ اگر اس دن کی سی سی ٹی وی فوٹیج نکالی جائے گی تو معاملہ واضح ہو جائے گا۔ اس معاملہ میں کوئی ڈاکومنٹ یا ثبوت اے سی بی کو نہیں دیا گیا ہیں۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز