داعش سے تعلق رکھنے کے الزم میں گرفتار عابد خان کو این آئی اے کورٹ نے سنائی پانچ سال کی سزا

Jul 28, 2017 12:12 PM IST | Updated on: Jul 28, 2017 12:26 PM IST

شملہ : آئی ایس آئی ایس سے تعلق رکھنے کے الزم میں 17 دسمبر 2016 کو ہماچل کے کلو سے گرفتار کئے گئے عابد خان کو شملہ کی نیشنل انویسٹی گیشن ایجنسی (این آئی اے) کی ایک عدالت نے پانچ سال کی سزا سنائی ہے۔ خیال رہے کہ عابد کرناٹک کے بنگلورو کا رہنے والا ہے۔ ایجنسی نے اس کے پاس سے تین موبائل سم، لیپ ٹاپ اور کئی دیگر قابل اعتراض مواد کے ساتھ گرفتار کرنے کا دعوی کیا تھا ۔ بتایا گیا تھا کہ عابد نے یہاں عیسائیت اپنا لیا تھا اور پال نام سے یہاں رہتا تھا، ساتھ ہی ساتھ وہ یہاں سندھوا میں واقع چرچ میں بھی آتا جاتا تھا۔

این آئی اے نے 19 جنوری 2017 کو عابد خان کے خلاف مقدمہ درج کیا تھا اور اس کو اپنی حراست میں لے لیا تھا۔ 12 جون 2017 کو ایجنسی نے چارشیٹ فائل کی تھی اور 19 جولائی کو عدالت میں الزامات طے کئے تھے۔ این آئی اے کی ٹیم نے ضلع و سیشن کورٹ کے جج وریندر سنگھ کے سامنے اسے پیش کیا، جہاں عدالت نے اسے 5 سال کی سزا اور 5 ہزار جرمانہ لگانے کا فیصلہ سنایا۔جرمانہ ادا نہ کرنے کی صورت میں اسے ایک ماہ کی اضافی سزا کاٹنی ہوگی ۔

داعش سے تعلق رکھنے کے الزم میں گرفتار عابد خان کو این آئی اے کورٹ نے سنائی پانچ سال کی سزا

عابد خان کے خلاف تقریبا 10 دفعات کے تحت مقدمہ درج کیا گیا تھا۔ این آئی اے کی تحقیقاتی ٹیم میں ایس پی اروند نیگی اور ڈی ایس پی دیویندر سنگھ شامل تھے۔

ذرائع سے اطلاع ملی ہے کہ فی الحال اس کو شملہ کی کنڈا جیل میں رکھا گیا ہے۔ تاہم عابد نے کورٹ سے فریاد کی ہے کہ کیونکہ وہ کرناٹک کا رہنے والا ہے، لہذا اسے وہیں منتقل کردیا کیا جائے۔ اس نے کہا کہ اس کے والدین سن رسیدہ ہیں۔ کورٹ نے اس کی اس درخواست پر فی الحال کوئی فیصلہ نہیں سنایا ہے۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز