یو پی مدرسہ بورڈ کے امتحانات میں نقل کے خلاف حکومت کی سختی کا خیرمقدم

یوپی مدرسہ بورڈ کے امتحانات میں حکو مت کی طرف سے نقل پر سختی کیے جانے پردینی مدارس سے وابستہ افراد نے حکومت کے اقدام کا خیر مقدم کیا ہے ۔

Apr 26, 2017 11:13 PM IST | Updated on: Apr 26, 2017 11:13 PM IST

الہ آباد : یوپی مدرسہ بورڈ کے امتحانات میں حکو مت کی طرف سے نقل پر سختی کیے جانے پردینی مدارس سے وابستہ افراد نے حکومت کے اقدام کا خیر مقدم کیا ہے ۔ لوگوں کا کہنا ہے کہ نقل پر سختی ہونے سے صلاحیت مند اور ہونہار طلبہ کو آگے بڑھنے کا موقع ملے گا ۔ واضح رہے کہ اس مرتبہ مدرسہ بورڈ کے امتحانات سخت انتظامات کے تحت کرائے جا رہے ہیں ۔ نقل پر سختی کی وجہ سے بڑے پیمانہ پر طلبہ کا ڈراپ آوٹ بھی سامنے آیا ہے ۔

اس مرتبہ مدرسہ بورڈ کے امتحانات میں نقل روکنے کے لیے ریاستی حکومت نے سخت اقدامات کیے ہیں ۔ امتحان گاہوں میں موبائل فون اور کتابیں لے جانے پر پابندی ہے ۔ امتحانات میں غیرمعمولی سختی کے چلتے تقریباً چالیس فیصد طلبہ و طالبات نے امتحان چھوڑ دیا ہے ۔ لیکن دینی مدارس سے وابستہ افراد کا کہنا ہے کہ اس طرح کی سختی سے مدرسہ بورڈ کے امتحانات کو قابل اعتماد بنانے میں مدد ملے گی۔

یو پی مدرسہ بورڈ کے امتحانات میں نقل کے خلاف حکومت کی سختی کا خیرمقدم

خیال رہے کہ نقل اور دیگر بد عنوانی کی وجہ سے یو پی مدرسہ بورڈ امتحانات کافی بد نام ہو چکا تھا ۔گزشتہ سماج وادی حکومت نے بھی نقل پر لگام لگانے کی کوشش کی گئی تھی ،لیکن اس کا کوئی خاطر کواہ نتیجہ نہیں سامنے آسکا تھا ۔اب ریاست کی یوگی حکومت نے نہ صرف نقل کے خلاف سخت اقدامات کرنے کا فیصلہ کیا ہے، بلکہ ایسے مدارس کے خلاف بھی کا رورائی کرنے کا فیصلہ کیا ہے جو نقل اور نقل کرانے والوں کی حوصلہ افزائی کرتے ہیں ۔

Loading...

Loading...

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز