یوپی میں یوگی راج: نوئیڈا میں نائیجیریا کے طلبہ پر حملہ، سشما نے کیا کارروائی کا وعدہ

Mar 28, 2017 12:41 PM IST | Updated on: Mar 28, 2017 12:46 PM IST

نئی دہلی۔ وزیر خارجہ سشما سوراج نے نوئیڈا میں افریقی طالب علموں پر حملے کے بارے میں منگل کو اتر پردیش کے وزیر اعلی آدتیہ ناتھ یوگی سے بات کی۔ دراصل، اس معاملے میں ایک غیر ملکی طالب علم نے سشما کو ٹویٹ کیا تھا کہ ہمارے لئے نوئیڈا میں رہنا اب زندگی کو خطرے میں ڈالنے والا مسئلہ بنتا جا رہا ہے۔ سشما نے جواب میں کہا کہ مرکزی حکومت معاملے سے آگاہ ہے۔ وزیر خارجہ سشما نے کہا کہ ہم فوری طور پر کارروائی کر رہے ہیں۔

سشما نے ٹویٹ کئے، میں نے گریٹر نوئیڈا میں افریقی طالب علموں پر حملے کے بارے میں اتر پردیش کے وزیر آدتیہ ناتھ یوگی سے بات کی۔ اس سے پہلے سشما نے ٹویٹ میں لکھا کہ میں نے یوپی کے وزیر اعلی یوگی آدتیہ ناتھ سے افریقی طالب علموں پر حملے کے بارے میں بات کی ہے۔ انہوں نے اس معاملے میں مناسب انکوائری کی بات کہی ہے۔ ساتھ ہی کہا کہ میں نے نوئیڈا میں افریقی طالب علموں پر حملے کے بارے میں یوپی حکومت سے رپورٹ طلب کی ہے۔ بتا دیں کہ پیر کو یوپی کے گریٹر نوئیڈا میں افریقی نژاد کچھ نائجیرين طالب علموں پر حملہ ہوا۔ حملے کی ویڈیو سوشل میڈیا پر بھی وائرل ہو رہی ہے۔ کیا ہے معاملہ

دراصل، پیر کو سینکڑوں لوگوں نے گریٹر نوئیڈا کے پری چوک پر کینڈل مارچ نکالا۔ یہ لوگ دو دن پہلے 19 سال کے ایک لڑکے کی منشیات کے اوورڈوز سے ہوئی موت سے ناراض تھے۔ مظاہرے کے دوران لوگوں نے نائجیریائی طالب علموں کو گریٹر نوئیڈا میں منشیات کے لئے ذمہ دار ٹھہراتے ہوئے انہیں باہر نکالنے کی مانگ کی۔ لوگوں کے مظاہرہ کی وجہ سے 3 کلو میٹر طویل جام لگ گیا۔ اس دوران ہجوم نے کچھ افریقی طالب علموں پر حملہ بھی کر دیا اور کئی گاڑیوں میں توڑ پھوڑ کی۔ موقع پر پہنچی پولیس کو حالات پر قابو پانے کے لئے لاٹھی چارج بھی کرنا پڑا۔ اس درمیان خبر ہے کہ پولیس نے 5 نائجیرین طالب علموں کو پوچھ گچھ کے لئے حراست میں لیا ہے۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز