دہلی میں فضائی آلودگی کی وجہ سے ’طبی ہنگامی صورتحال ‘: ایمس

نئی دہلی۔ آل انڈیا انسٹی ٹیوٹ آف میڈیکل سائنسز (ایمس) نے دہلی میں فضائی آلودگی سے پیدا ہوئے حالات کو ’طبی ہنگامی صورتحال‘ قرار دیا ہے۔

Nov 09, 2017 02:04 PM IST | Updated on: Nov 09, 2017 02:04 PM IST

نئی دہلی۔ آل انڈیا انسٹی ٹیوٹ آف میڈیکل سائنسز (ایمس) نے دہلی میں فضائی آلودگی سے پیدا ہوئے حالات کو ’طبی ہنگامی صورتحال‘ قرار دیا ہے۔ ایمس کے ڈائرکٹر ڈاکٹر رندیپ گلیریا نے  یہاں نامہ نگاروں سے کہا کہ اس موسم میں ادارہ کے او پی ڈی اور آئی سی یو میں مریضوں کی تعداد بیس فیصد بڑھ گئی ہے۔ جن لوگوں کو سانس اور دل کی بیماری ہے وہ اس موسم میں سب سے زیادہ متاثر ہیں۔ بچوں کو اس کی وجہ سے پھیپھڑوں اور دیگر طرح کے مسائل پیدا ہوسکتے ہیں جو ان کے لئے خطرناک ہوسکتے ہیں۔

دہلی کی فضائی آلودگی کو آہستہ آہستہ جان لیوا قرار دیتے ہوئے کہاکہ اس موسم میں ہوا میں سلفر اور نائٹروجن آکسائڈ بڑھ جاتی ہے جس سے سانس لینے میں تکلیف ہوتی ہے۔ ڈاکٹر گلیریا نے کہا کہ زیادہ عمر کے لوگوں اور بچوں کے لئے یہ موسم مناسب نہیں ہے اور انہیں اپنے گھروں میں ہی رہنا چاہئے۔ اس دوران کسرت، گھومنا پھرنا، سائکل چلانا، جوگنگ جیسی سرگرمیاں نہیں کی جانی چاہئیں اور بچوں کو گھر سے کھیلنے کیلئے نہیں نکلنا چاہئے۔ انہوں نے اس دوران وٹامن سی اور زیادہ تر پانی اور پینے کی چیزوں جیسے جوس وغیرہ کا استعمال کرنے کا مشورہ دیا۔

دہلی میں فضائی آلودگی کی وجہ سے ’طبی ہنگامی صورتحال ‘: ایمس

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز