پٹاخے کی فروخت پر سپریم کورٹ کی پابندی کے باوجود جم کر آتشبازی ، دہلی میں آلودگی سنگین سطح پر پہنچی

Oct 20, 2017 07:55 PM IST | Updated on: Oct 20, 2017 07:55 PM IST

نئی دہلی: سپریم کورٹ کی طرف سے دہلی اور قومی دارالحکومت خطہ میں پٹاخے کی فروخت پر پابندی کے باوجود دیوالی کے دن جمعرات کو دارالحکومت میں جم کر آتشبازی ہوئی اور آلودگی سنگین سطح پر پہنچ گئی ہے۔ مرکزی آلودگی کنٹرول بورڈ کی طرف سے جمعہ کی شام چار بجے جاری اعداد و شمار کے مطابق گزشتہ 24 گھنٹے میں دہلی میں آلودگی کا انڈیکس 403 پر رہا جو ’سنگین‘ کے زمرے میں آتا ہے۔ اس انڈیکس میں پی ایم 2.5، پی ایم 10 اور دیگر آلودگی کے اعداد و شمار شامل ہیں اور یہ پوری ریاست کا اوسط اعدادوشمار ہے۔

جمعرات کو دہلی میں آلودگی کی سطح انتہائی خراب (انڈیکس 301 سے 400) کے زمرے میں تھا۔ جمعرات کی رات سے آلودگی میں تیزی سے اضافہ درج کیا گیا۔ سینٹر فار سائنس کی رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ جمعہ کو ہوا مستحکم رہنے اور نمی بڑھنے سے آلودگی کے عناصر مقامی سطح پر قید ہوکر رہ گئے اور شام تک آلودگی سنگین سطح پر پہنچ گیا۔ تاہم، اس کا یہ بھی کہنا ہے کہ اگر پٹاخے کی فروخت پر روک نہیں ہوتی تو حالات مزید خراب ہوتے۔

پٹاخے کی فروخت پر سپریم کورٹ کی پابندی کے باوجود جم کر آتشبازی ، دہلی میں آلودگی سنگین سطح پر پہنچی

زمینی سائنس وزارت کی ملک بھر میں آلودگی پر نظر رکھنے والی ایجنسی سفر (سسٹم آف ایر کوالٹی اینڈ ویدر فور کاسٹ)کے شام چھ بجے کے اعداد و شمار کے مطابق، جمعہ کی شام چھ بجے تک دہلی میں پی ایم 10 کی اوسط سطح 595 مائیکروگرام فی مکعب میٹر پر اور پی ایم 2.5 407 مائیکروگرام فی مکعب میٹر تک پہنچ چکا تھا اور اب اس میں مسلسل اضافہ دیکھا جا رہا ہے۔ گزشتہ سال دیوالی کے اگلے دن پی ایم 10 اور 2.5 کی سطح بالترتیب 836.1 اور 624.2 مائیکروگرام فی مکعب میٹر ریکارڈ کیا گیا تھا۔ دہلی این سی آر میں جن علاقوں میں سب سے زیادہ آلودگی کی سطح درج کیا گیا ان میں لودھی روڈ، آیانگر، متھرا روڈ، پوسا روڈ، گڑگاؤں، پيتم پورا، نوئیڈا اور دہلی ہوائی اڈے کا ٹرمینل 3 شامل ہیں۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز