یوم پیدائش پر خاص : اردو داں طبقہ نے ہی اکبر الہ آبادی کی ادبی خدمات کو کردیا فراموش

اردو ادب میں طنز و مزاح کے عظیم شاعر اکبر الہ آبادی کا آج یوم پیدائش ہے ۔اکبر الہ آباد ی نے اپنی مزاحیہ اور ظریفانہ شاعری کے ذریعے قوم کو ایک نیا پیغام دیا ،لیکن اکبر الہ آبادی خود اپنے آبائی وطن الہ آباد میں گمنامی کا شکار ہیں

Nov 16, 2017 11:03 PM IST | Updated on: Nov 16, 2017 11:03 PM IST

الہ آباد :اردو ادب میں طنز و مزاح کے عظیم شاعر اکبر الہ آبادی کا آج یوم پیدائش ہے ۔اکبر الہ آباد ی نے اپنی مزاحیہ اور ظریفانہ شاعری کے ذریعے قوم کو ایک نیا پیغام دیا ،لیکن اکبر الہ آبادی خود اپنے آبائی وطن الہ آباد میں گمنامی کا شکار ہیں ۔ یوں تو عظیم شاعر کی کوئی یاد گار نہیں بنائی گئی ہے اور اگر الہ آباد میں اکبر کی یادگار کے طورپر ان کا مزار بھی ہے تو بہت کم لوگ ہی جانتے ہیں کہ یہ مزار ایک عظیم شاعر کا مزار ہے ۔

اکبر الہ آباد کی پیدائش 16 ؍ نومبر 1845 کو الہ آباد کے بارہ تحصیل میں ہوئی تھی ۔اردو شاعری کو ایک نئی سمت عطا کرنے والے اکبر الہ آبادی کا شمار طنز و مزاح کے سب سے بڑے شاعر کے طور پر کیا جاتا ہے ۔اکبر نے اپنی شاعری کے ذریعہ انگریزی تہذیب اور حکومت کو اپنی ظریفانہ تنقید کا نشانہ بنایا ۔ اگرچہ اکبر الہ آبادی اپنی مزاحیہ شاعری کی وجہ سے مشہور ہیں ، تاہم ان کی شاعری کے پس منظر میں ان کے قومی پیغام کو سمجھنے کی کم ہی کوشش کی گئی ہے ۔

یوم پیدائش پر خاص : اردو داں طبقہ نے ہی اکبر الہ آبادی کی ادبی خدمات کو کردیا فراموش

اکبر الہ آبادی پر کئی تحقیقی مقالات لکھنے والے مشہور نقاد پروفیسر علی احمد فاطمی کا کہنا ہے کہ اکبر کی شاعری کے ساتھ ساتھ ان کی سماجی اور سیاسی افکار کو سمجھنے کی بھی بہت ضرورت ہے۔

Loading...

Loading...

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز