ڈیڑھ گھنٹے تک جاری رہی اکھلیش-ملائم کی ملاقات، دونوں کے درمیان ہوئیں یہ باتیں!۔

Jan 10, 2017 12:58 PM IST | Updated on: Jan 10, 2017 03:46 PM IST

لکھنؤ۔ سماج وادی پارٹی میں مچے گھمسان ​​کے درمیان پیر کو ملائم سنگھ اور اکھلیش یادو کے درمیان صلح ہونے کے آثار نظر آئے تھے جس کے بعد منگل کو باپ- بیٹے کے درمیان ملاقات ہوئی۔ سی ایم اکھلیش یادو ملائم سنگھ سے ملنے ان کی رہائش گاہ پر پہنچے اور یہاں دونوں کے درمیان تقریبا ڈیڑھ گھنٹے تک بات چیت ہوئی۔ بتایا جا رہا ہے کہ ڈیڑھ گھنٹے تک جاری رہی دونوں کی ملاقات بے نتیجہ رہی۔

ذرائع کے مطابق ملائم سنگھ نے اکھلیش کے سامنے صلح کا جو فارمولہ رکھا اس پر بات نہیں بنی۔ بتایا جا رہا ہے کہ ملائم قومی صدر کے عہدے کے لئے اڑ گئے ہیں لیکن مانا جا رہا ہے کہ ٹکٹوں کی تقسیم وزیر اعلی اکھلیش یادو ہی کریں گے۔ ذرائع کے مطابق ملائم نے اکھلیش کو الیکشن کمیشن کو دیا گیا خط واپس مانگنے کے لیے بھی کہا ہے اور ملائم نے اس بات پر بھی زور دیا کہ انتخابات کی قیادت وہ ہی کریں گے۔

ڈیڑھ گھنٹے تک جاری رہی اکھلیش-ملائم کی ملاقات، دونوں کے درمیان ہوئیں یہ باتیں!۔

گیٹی امیجیز

اس سے پہلے پیر کو اکھلیش کو لے کر ملائم سنگھ نرم پڑتے نظر آئے تھے۔ ملائم سنگھ نے صاف کر دیا تھا کہ اگلے وزیر اعلی اکھلیش یادو ہی ہوں گے۔ ساتھ ہی ملائم نے کہا تھا کہ میں ہر منڈل میں جا کر پارٹی کی تشہیر کروں گا۔ پارٹی میں اتحاد ہے اور اس کے ٹوٹنے کا کوئی سوال نہیں ہے۔ نہ پارٹی ٹوٹی ہے اور نہ ہی ٹوٹےگی۔ تاہم الیکشن کمیشن سے ملاقات کے بعد ملائم نے بیٹے کے تئیں تو نرمی برتی تھی، لیکن رام گوپال کو اشارے-اشارے میں سازش کرنے والا کہا تھا۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز