علی گڑھ مسلم یونیورسٹی میں خود سوزی کی کوشش کرنے والے طالب علم محمد فراز کی علاج کے دوران موت

Jul 17, 2017 10:05 PM IST | Updated on: Jul 17, 2017 11:40 PM IST

علی گڑھ : علی گڑھ مسلم یونیورسٹی میں خود سوزی کی کوشش کرنے والے طالب علم کی پیر کی صبح دہلی کے صفدر جنگ اسپتال میں علاج کے دوران موت ہو گئی۔ مہلوک طالب علم محمد فراز بہار کے سہرسہ کا رہنے والا تھا۔ اس کے خاندان کے اراکین بحرین میں رہتے ہیں۔

قابل ذکر ہے کہ اے ایم یو سے بی ٹیک (الیکٹرانک) فائنل ایئر کی تعلیم حاصل کرنے والے 26 سال کے طالب علم محمد فراز نے فیل ہونے کی وجہ سے کل خود کو آگ لگا لی دی۔ وہیں خود کو آگ لگا کر اس طالب علم نے سلیمان ہال کی چھت سے چھلانگ بھی لگادی ۔ واقعہ کے بعد یونیورسٹی کیمپس میں سنسنی پھیل گئی تھی ۔

علی گڑھ مسلم یونیورسٹی میں خود سوزی کی کوشش کرنے والے طالب علم محمد فراز کی علاج کے دوران موت

سنگین صورتحال میں طالب علم کو میڈیکل کالج سے دہلی ریفرکردیا کیا گیا تھا۔ خود سوزی کی کوشش کی اطلاع پر پولیس کے ساتھ اے ایم یو کے افسران بھی موقع پر پہنچے۔ اے ایم یو کے پراکٹر پرو فیسر ایم محسن کے مطابق طالب علم نے فیل ہونے پر پیٹرول چھرک کر ڈال کر آگ لگا لی تھی ۔ سنگین حالت میں طالب علم کو دہلی ریفری کردیا گیا تھا، جہاں علاج کے دوران اس کی موت ہوگئی۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز